Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 03:32 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

سماج کو نظافت وحفظان صحت کے تئیں بیدارکرنامذہبی رہنماؤں کا اہم فریضہ: سوامی چدانند

 

یونیسیف کے زیراہتمام گنگاساحل میں منعقدہ سہ روزہ کانفرنس کی افتتاحی تقریب میں سبھی مذاہب کے پیشواکی شرکت، مولانا کلب صادق نے کہاکہ دل کا صاف ہونا انتہائی ضروری

رشی کیش سے نثاراحمدخان کی رپورٹ

رشی کیش، دہرہ دون، 28نومبر(ایس ٹی بیورو) آج ہندوستان میں صفائی ستھرائی کے تئیں احتیاط نہ برتنے کی وجہ سے روزانہ 1200ورسالانہ تقریباً5لاکھ بچوں کی موت ہوتی ہے،ہندوستان ایسی جگہ ہے جہاں بچوں کی حفاظت کے تئیں بہت زیادہ احتیاطی برتی جاتی ہے اوربعد میں چل کر یہ ایک بیماری کی شکل اختیار کرلیتی ہے۔اس لیے ہمیں بچوں کے اندر صفائی ستھرائی کے سلسلے میں بیداری پیداکرنے اوران کے والدین کو ترغیب دینے کیلئے ہمیں یونیسیف کے ذریعہ چلائے جارہے اس پروگرام میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینے کی ضرورت ہے۔ یہ باتیں اتراکھنڈ کے رشی کیش میں گنگا کے ساحل یونیسیف کے زیراہتمام منعقدہ سہ روزہ کانفرنس کے افتتاحی تقریب میں پرماتما نکیتن میں آج یہاںآئے ہوئے مختلف مذاہب کے پیشواؤں نے اپنے اپنے عقیدتمندوں کے درمیان یہ پیغام پہنچانے کی بات کہی۔ اس موقع پر پرماتما نکیتن آشرم کے سوامی چدانندنے کہاکہ ہم نے فیصلہ کیا کہ سبھی مذاہب کے رہنماؤں کو اکٹھا کیاجائے اور سماج کو ایک ایسا پیغام دیاجائے جس سے سماج میں سدھار پیدا کی جاسکے۔کیونکہ سماج کو نظافت وحفظان صحت کے تئیں بیدارکرنامذہبی رہنماؤں کا اہم فریضہ ہے۔ اس موقع پر معروف شیعہ عالم دین مولانا کلب صادق، مولانا عمیر الیاسی، حافظ اقبال انصاری اور دوسرے مذاہب کے رہنما موجود تھے۔ سوامی چدانند نے کہاکہ تمام مذاہب کے ر ہنما اپنے اپنے میدان میں بہتر خدمات انجام دے رہے ہیں، مگر اگر صفائی ستھرائی کے تئیں ہم مخلصانہ کوشش کرتے ہیں تو اس سے سماج میں بیداری پیداہوگی اور آلودگی کی وجہ سے ہونے والے اموات کو بھی کنٹرول کیاجاسکے۔انہوں نے کہاکہ سماج کو ایک نیا پیغام دینا ایک بڑی عبادت ہے اس لئے ہم سب مل کر ایک تحریک کے ذریعہ یونیسیف کی کوششوں کو آگے بڑھانا چاہئے۔معروف شیعہ عالم دین مولاناکلب صادق نے کہاکہ اگر ہم جسم نہیں جوڑ سکتے تو دلوں کوتوجوڑ سکتے ہیں، کیونکہ دلوں کو جوڑ کررکھنا انتہائی ضروری ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمارے دلوں کا صاف ہونا بہت ضروری ہے کیونکہ اگر ہمارے دل صاف ہوں گے تو پھر معاشرے کو بہتر پیغام دے سکیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہم یہاں اکٹھا توہوگئے ہیں، مگر ہمیشہ اکٹھا نہیں ہوسکتے، لیکن جب ہم یہاں سے نکلیں تو ہمارے دل ایک دوسرے سے جڑے رہیں اور ہم اپنی مشترکہ تہذیب کو فروغ دیں۔مولانا کلب صادق نے یہ بھی کہا کہ ہمارے پیغمبر کے جسم مبارک پر کبھی مکھی بھی نہیں بیٹھتی تھی اور صفائی کا خاص خیال رکھتے تھے، چنانچہ اسلام سے یہ درس ملتا ہے کہ خود کی صفائی کیساتھ ساتھ اپنے محلے اور اپنے علاقے کو ہربرائی سے پاک رکھیں، تبھی ہمیں ایک اچھا سماج مل سکتاہے۔ انہوں نے یہ بھی کہاکہ ہمارا ملک انتہائی قدیم تہذیب ووراثت کی علامت ہے، اس لئے ہم کو اپنے ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرنا چاہئے۔ مولانا کلب صادق نے کہاکہ ہم سب کو ملک کی ترقی کیلئے دعا کرنی چاہئے کہ وہ ہر میدان میں ترقی کے منازل طے کرے۔

 

          

...


Advertisment

Advertisment