Today: Sunday, September, 23, 2018 Last Update: 05:46 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

ترقی کیلئے بی جے پی کو ووٹ دیں: مودی

 

کشٹواڑ۔ 22 نومبر (یو این آئی) وزیراعظم نریندر مودی نے جموں وکشمیر کی چہار رخی ترقی کے لئے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو ووٹ دینے کی اپیل کرتے ہوئے آج یہاں وزیراعلی عمر عبداللہ اور پی ڈی پی کے بانی مفتی محمد سعید پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ یہ خاندان گزشتہ پانچ دہائی سے اس ریاست کو لوٹتے رہے ہیں اور اب یہ لوٹ ختم ہونی چاہئے ۔مسٹر مودی یہاں اسمبلی انتخابات کے سلسلہ میں پارٹی امیدواور کی حمایت میں ایک عوامی ریلی سے خطاب کررہے تھے۔انہو ں نے اس موقع پر کہا کہ ریاست میں طویل عرصہ سے کنبہ پروری اور نسل پرستی کی لوٹ جاری ہے جسے ختم کرنے اور ترقی کی راہ ہموار کرنے کے لئے لوگوں کو بی جے پی کو ووٹ دینا چاہئے۔انہوں نے لوگوں سے سیدھی بات چیت کرتے ہوئے سوالیہ لہجے میں کہا کہ گزشتہ 50 برسوں سے کون جموں وکشمیر کو لوٹتا آیا ہے۔ سیدھا جواب ہے دو خاندان۔ آخر کیوں آپ لوگوں نے ان کے ہاتھوں میں اس ریاست کو اتنے دنوں تک یرغمال بنائے رکھا ۔ ان خاندانوں نے لوٹ کھسوٹ مچانے کے لئے باقاعدہ سانٹھ گانٹھ کررکھی تھی اور وہ ہر پانچ برس میں باری باری سے ایسا کرتے رہے۔وزیراعظم نے اپنی تقریر کے دوران راست طورپر مسٹر عبداللہ اور مسٹر سعید کا نام نہیں لیا صرف بالواسطہ طورپر ان پر حملہ کرتے رہے۔مسٹر مودی نے ریاست کی نیشنل کانفرنس حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہاکہ حکومت مرکز کی جانب سے بھیجے گئے پیسوں کو لوٹنے میں مصروف ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہاں پیسہ آتا ہے پھر کہاں جاتا ہے یہ پتہ نہیں ۔ ریاستی حکومت کے لئے تو سیلاب کی تباہی ایک نعمت بن کر آئی ہے کیونکہ اس نے لوٹ مچانے کے لئے اس کا اچھا استعمال کیا۔وزیراعظم نے کہاکہ میں یہاں کوئی وعدہ کرنے نہیں آیا ہوں۔ میں تو یہاں آپ کے آنسو پوچھنے آیا ہوں۔ میں سابق وزیراعظم اٹل بہاری واجپئی کے یہاں کے تعلق سے دیکھے گئے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے آیا ہوں۔ مرکزی حکومت یہاں کے لئے کئی منصوبے پیش کرنے والی ہے۔انہوں نے سیلاب کا ذکر کرتے ہوئے کہاکہ ریاست میں جب اس قدرتی آفت نے تباہی مچائی تھی تو وہ فوراً یہاں پہنچے اور فوراً ہی ایک ہزار کروڑ روپے کی مدد کا اعلان کیا تھا۔ دیوالی بھی انہوں نے ریاست کے لوگوں کے ساتھ رہ کر منائی تاکہ ان کے دکھ درد کو بانٹ سکیں۔انہوں نے کہاکہ چند لوگ یہاں کے شہریوں کو یہ کہہ کر گمراہ کررہے ہیں کہ بی جیپی کو کشمیری تارکین وطن کا کوئی خیال نہیں لیکن میں آپ کو یہاں کی زمین پر کھڑا ہوکر یہ بتادوں کہ میری حکومت ان کی فلاح و بہبود کے لئے پرعزم ہے۔وزیراعظم نے کہاکہ ریاست کو بدعنوانی سے پاک حکومت چاہئے ایسی حکومت جو ایمانداری سے کام کرے۔ لوگوں کی تکلیفوں کو سمجھ سکے اور حالات تبدیل کرنے کے لئے سنجیدہ کوششیں کرے۔ انہو ں نے لوگوں سے مذہب اور سیاست کو علاحدہ رکھنے کی اپیل کرتے ہوئے کہاکہ اگر اس بار ریاست میں بی جے پی کو حکومت سازی کا موقع دیا گیا تو لوگوں کو کبھی اس کے لئے پچھتانا نہیں پڑے گا۔ ریاست کو بہتر سڑکیں، بہتر اسپتال، اسکول اور دیگر تمام طرح کی سہولیات ملیں گی۔ انہوں نے اس موقع پر گجرات خاص طورپر مسلم اکثریتی علاقے میں کئے گئے ترقیاتی کاموں کا حوالہ بھی دیا۔انہوں نے کہاکہ پہلے جب کسی کو نوکری پر کچھ بھیجا جاتا تھا تو اسے سزا کے طورپر دیکھا جاتا تھا لیکن آج کی تاریخ میں کچھ سب سے زیادہ تیزی کے ساتھ ترقی کرنے والا ضلع بن چکا ہے۔ جس طرح کچھ سے بے روزگاری کا خاتمہ کیا گیا ہے اسی طرح کشمیر سے بھی بے روزگاری ختم کردی جائے گی۔انہوں نے جموں وکشمیر کو سیاحت کے بڑے مرکز کے طورپر ترقی دینے کا بھی وعدہ کیا اور کہاکہ سیلاب کی وجہ سے اس علاقہ کو جو نقصان پہنچا ہے اس کی بھرپائی کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ فلمی صنعت جس نے اس ریاست دوری اختیار کی ہوئی ہے اسے بھی یہاں واپس لانے کا کام کیا جائے گا۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment