Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 11:33 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

مختار عباس نقوی اور صابر علی کے درمیان صلح

 

نئی دہلی: مرکزی وزیر مملکت مسٹرمختار عباس نقوی کے خلاف جنتا دل یونائٹیڈ (جے ڈی یو) کے سابق رکن پارلیمنٹ صابر علی کے ذریعہ دائر کیا گیا ہتک عزت کا معاملہ آج دونوں فریقوں کے درمیان صلح صفائی کے بعد ختم ہوگیا۔ پٹیالہ ہاؤس کورٹ میں آج اس معاملے پر سماعت شروع ہونے پر مسٹر صابر علی کے وکیل نے بتایا کہ دونوں فریقوں کے درمیان صلح ہوگئی ہے۔ انہوں نے عدالت کو بتایا کہ مسٹر صابر علی مسٹر مختار عباس نقوی کے خلاف اپنی ہتک عزت کی شکایت واپس لینے کیلئے پہلے عرضی دے چکے ہیں۔ اس پر میٹرو پولیٹن مجسٹریٹ آکاش جین نے کہا کہ مدعی اور مدعا علیہ کے درمیان سمجھوتہ ہوجانے کے بعد اس شکایت کو واپس لینے کی اجازت دی جاتی ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ مسٹر مختار عباس نقوی کو 9 نومبر کی توسیع میں مودی کابینہ میں مرکزی وزیر مملکت کی حیثیت سے شامل کیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ مسٹر صابر علی گزشتہ 28 مارچ کو جے ڈی یو کو چھوڑ کر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) میں شامل ہوئے تھے۔ اسی روز بی جے پی کے لیڈر مسٹر عباس نقوی نے ٹوئیٹر پر مسٹر صابر علی کے سلسلے میں تبصرہ کیا تھا۔ اس تنازعہ کے بعد ہی بی جے پی میں مسٹر صابر علی کی رکنیت مسترد کردی گئی تھی۔ جس کے بعد صابر علی نے مختار عباس نقوی کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کردیا تھا۔ عدالت نے مسٹر نقوی کو سمن جاری کیا تھا اور انہیں گزشتہ 9 جولائی کو ضمانت دے دی تھی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment