Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 05:11 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

اقلیتی معاملوں میں سنجیدگی کا مظاہرہ کررہے ہیں اقلیتی وزیر

 

مہاراشٹرحکومت میں اقلیتی امور کے وزیر ایکناتھ راؤ کھڑسے نے درگاہ والی مسجد شہید کئے جانے کے بارے میں تفصیلات طلب کیں

ممبئی، 11 نومبر (یو این آئی) مہاراشٹر کے اقلیتی امور کے وزیر ایکناتھ راؤ کھڑسے نے آج یہاں ممبئی سے متصلہ نئی ممبئی میں واقع درگاہ والی مسجد شہید کئے جانے کے معاملے میں سرکاری ادارے سڈکو کے اعلی افسر ونود بھاٹیہ سے تفصیلات طلب کی۔ بعد حقائق پر مبنی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت جاری کی ۔موصولہ اطلاعات کے مطابق کھڑسے نے ونود بھاٹیہ سے نہ صرف تفصیلات طلب کیں بلکہ نصف شب ہوئی انہدامی کارروائی پر ناراضگی کا بھی اظہار کیا اور یہ بھی ہدایت دی کہ اقلیتی امور وزارت کو اس بات سے بھی مطلع کیا جائے کہ آیا انہدامی کارروائی سے قبل مسجد انتظامیہ کو مطلع کیا گیا تھا یا نہیں واضح رہے کہ نئی ممبئی کے نیرول نامی علاقے میں واقع پام بیچ روڈ پر تقریباً دو سو سال پرانی درگاہ مسجد کو گذشتہ دنوں نصف شب یہ کہہ کر شہید کردیا گیا تھا کہ مسجد غیر قانونی ہے۔ درگاہ مسجد انتظامیہ کا کہنا ہے کہ انہیں انہدامی کارروائی کا کوئی نوٹس جاری نہیں کیا گیا تھا اور ان کے پاس وہ تمام دستاویزات موجود ہیں جن سے یہ ثابت کیا جاسکے کہ مسجد قدیم ہے اور اسے قانونی حیثیت حاصل ہے۔اس سلسلے میں مسلم اراکین اسمبلی نے بھی احتجاج کیا تھا۔ انہدامی کارروائی کے فوراً بعد سابق اقلیتی امور وزیر و سینئر کانگریس رکن محمد عارف نسیم خاں نے درگاہ مسجد کا معائنہ کیاتھا اور نصف شب کی گئی انہدامی کارروائی پر برہمی کا اظہار کیا تھا۔سماج وادی پارٹی نے گذشتہ دنوں رکن اسمبلی ابو عاصم اعظمی کی قیادت میں اس سلسلے میں ممبئی کے آزاد میدان میں دھرنا بھی دیا تھا۔مجلس اتحاد المسلمین کے رکن اسمبلی وارث پٹھان نے بھی نیرول جاکر حالات کا جائزہ لیا تھا اور اعلی افسروں سے بات چیت کی تھی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment