Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 09:50 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

تلنگانہ کے محبوب نگر میں ' آسرا اسکیم ' کی شروعات

 

جو بات کہتا ہوں اس پر عمل کرتا ہوں،چوروں کی طرح بات نہیں کرتاہوں:وزیراعلی تلنگانہ چندرشیکھرراو

حیدرآباد8نومبر(یو این آئی) تلنگانہ کے وزیر اعلی چندر شیکھر راؤ نے آج محبوب نگر میں آسرا اسکیم کی شروعات کی۔ ضلع محبوب نگر کتور منڈل میں وزیر اعلی نے معذورین ‘ بیواؤں اور معمر افراد کے لئے وظیفہ میں اضافہ کرتے ہوئے نئی اسکیم آسرا کا آغاز کیا ۔ اس اسکیم کے تحت معمر اور بیواؤں کو ایک ہزار روپئے اور معذورین کو پندرہ سو روپئے دیئے جائیں گے ۔ آج ریاست تلنگانہ کے ہر ضلع میں متعلقہ وزرا اس اسکیم کے تحت عوام میں وظیفے جاری کررہے ہیں ۔ ضلع محبوب نگر میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلی کے چندرشیکھر راو نے کہا کہ چوروں کی طرح بات کرنا انہیں نہیں آتااور وہ جو بات کرتے ہیں اس پر عمل کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ نئی تشکیل شدہ ریاست تلنگانہ کو بعض مسائل کا سامنا ہے۔انہوں نے بعض مسائل پر حزب اختلاف کی جماعتوں کی جانب سے حکومت پر نکتہ چینی کرنے پر برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ ریاست کی تشکیل کے صرف چند ماہ کے اندر ہی بعض جماعتیں عوام کو گمراہ کررہی ہیں اور انہیں بے وقوف بنارہی ہیں۔مسٹر راو نے کہا کہ انہوں نے ریاست کے کسانوں کے قرضوں کی معافی کا وعدہ کیا تھا اور اس سلسلہ میں اقدامات بھی کئے ہیں۔انہوں نے واضح کیا کہ وہ تمام انتخابی وعدوں کی تکمیل کریں گے۔انہوں نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پڑوسی ریاست آندھراپردیش کے وزیراعلی این چندرابابو نائیڈو نے کسانوں کے ایک روپئے کا قرض بھی معاف نہیں کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ پڑوسی ریاست کے وزیراعلی این چندرابابو نائیڈو تلنگانہ کی حکومت پر کیچڑ اچھالنے کی کوشش کر رہے ہیں۔چندرشیکھر راو نے کہا کہ ضلع محبوب نگر کافی پسماندہ ہے۔ وہ اس ضلع کے عوام کے مسائل سے واقفیت رکھتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس ضلع کی ترقی کے لیے اقدامات کئے جائیں گے اورپانچ ہزار کیلومیٹر طویل سڑک کی تعمیر عمل میں لائی جائے گی اور 6200کیلومیٹر طویل سڑک کی مرمت اور اس کو درست کرنے کے کام بھی کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ متحدہ آندھراپردیش کے موقع پر اس ضلع کو کافی پسماندہ بنادیا گیاتھا اور اس کی سڑکوں کو نظر انداز کر دیا گیا تھا۔پالمور لفٹ اریگیشن اسکیم کے تحت سروے کا کام کیا جائے گا۔مسٹر راو نے کہا کہ ان کی حکومت تما م مستحق افراد کو وظیفہ مہیاکرے گی۔انہوں نے کہا کہ ایسے مستحق افراد جنہیں وظیفہ نہیں مل رہا ہو ، وہ اس بات کی شکایت متعلقہ افسروں سے کر سکتے ہیں ۔ ان کی شکایت فوری طور پر دور کی جائے گی۔کوئی بھی مستحق بچنا نہیں چاہئے بلکہ تمام مستحق افراد کو اس اسکیم سے فائدہ ہونا چاہئے۔مسٹر راو نے سابق حکومتوں پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ سابقہ حکومتوں نے غریبوں او ر مستحق افراد کو وظیفہ کے نام پر تماشہ کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ حکومت کی جانب سے نا اہل افراد کو جو وظیفہ جاری کیا گیا تھا ان کی حکومت ان وظائف کو منسوخ کرے گی۔انہوں نے کہاکہ جلد ہی نئے راشن کارڈ بھی جاری کئے جائیں گے۔ایک راشن کارڈ پر ہر فرد کو ایک روپئے فی کیلو کے حساب سے چھ کلو چاول مہیا کروائے جائیں گے او ر مستحق افراد کے راشن کارڈ منسوخ نہیں کئے جائیں گے۔

...


Advertisment

Advertisment