Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 05:14 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

سائبرجرائم کو روکنے کی حکمت عملی تیار کی جائے گی

 

راجناتھ سنگھ نے حیدرآباد میں رن فار یونیٹی کو جھنڈی دکھائی

حیدرآباد31اکتوبر(یو این آئی) بڑھتے ہوئے سائبر جرائم پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ اس کو روکنے کے لیے عنقریب حکمت عملی تیار کی جائے گی۔ انہوں نے اپنی وزارت کے اعلی افسروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ موثر حکمت عملی تیار کریں کیونکہ روایتی جرائم سے ہٹ کر سائبر جرائم میں دنیا بھر میں اضافہ ہورہا ہے اور اس سے پولیس کو چیلنجوں کا سامنا ہے۔ راج ناتھ سنگھ نے شہر حیدرآباد کی سردار ولبھ بھائی پٹیل نیشنل پولیس اکیڈیمی میں انڈین پولیس سروس کے 66 ریکروٹس کی پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ 201314ء کے اعداد و شمار بتاتے ہیں کہ سائبر جرائم کی تعداد میں 50فیصد تک اضافہ ہوا ہے۔ مہاراشٹرا‘ اترپردیش اور آندھراپردیش متاثر ریاستوں میں شامل ہیں۔ انہوں نے یقین دہانی کروائی کہ حکومت پولیس اصلاحات پر عمل کے اقدامات کرے گی اور بغیر کسی تاخیر کے پولیس کو عصری بنانے کے کاموں میں تیزی پیدا کی جائے گی۔وزیر داخلہ نے جرائم کی بڑھتی وارداتوں کے پیش نظر پولیس ٹریننگ اور پولیس آرگنائزیشن کو عصری بنانے پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ کہ 1978ء میں دھرم ویر کمیشن کا قیام پولیس اصلاحات کے لئے عمل میں لایا گیا تھا لیکن اس کی سفارشات پر عمل نہیں کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی پولیس کو درپیش چیلنجوں دیگر ممالک کی پولیس کو درپیش چیلنجوں سے مختلف ہے۔ انہوں نے ٹرینی افسروں کو مشورہ دیا کہ وہ سماجی‘ اقتصادی اور ثقافتی ماحول کو سمجھیں۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستانی پولیس افسروں کو چاہئے کہ وہ لا اینڈ آرڈر کی برقراری کے لئے سماجی و نفسیاتی معیارات میں بھی اضافہ کریں اور انوکھے طریقہ کار تحقیقات میں استعمال کریں۔ انہوں نے حساس معاملات پر نظر رکھنے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ ٹرینی افسروں کو انہوں نے مشورہ دیا کہ وہ اپنے میں لیڈرشپ معیارات کو فروغ دیں۔دنیا بھر میں کمیونٹی پولیسنگ کے نظریہ کی نشاندہی کرتے ہوئے راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ ہندوستانی پولیس کو بھی اس سمت اہم اقدامات کرنے چاہئیں۔ کمیونٹی پولیسنگ میں پولیس کو یکساں طریقہ کار اختیار کرنا چاہئے۔ اکیڈیمی کی صدرنشین ارونا بہوگنا نے کہا کہ اکیڈیمی کی جانب سے پولیس افسروں کو تربیت دی جاتی ہے۔ تربیت پانے والے افسروں میں 143 افسر شامل ہیں جنہوں نے 46 ہفتے کی تربیت حاصل کی۔ ان افسروں میں 28 خواتین بھی ہیں۔ 2013ء کے آئی پی ایس بیچ کے افسروں میں 15 بیرونی ممالک کے ٹرینی افسر جن میں نیپال کے 5‘ بھوٹان کے 6 اور مالدیپ کے 4 افسر شامل ہیں۔ دریں اثنا مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے ملک کے پہلے وزیر داخلہ سردار پٹیل کی یوم پیدائش کے موقع پر حیدرآباد میں رن فار یونیٹی (اتحاد کے لئے دوڑ) کو جھنڈی دکھائی۔ انہوں نے اسمبلی کی عمارت کے قریب سردار پٹیل کے مجسمہ کی گلپوشی کے بعد اس دوڑ کو جھنڈی دکھائی جس میں عوام کے علاوہ بی جے پی کے کارکنوں کی کثیر تعداد میں شرکت کی۔ انہوں نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انگریز ہندوستان کو آزادی کے بعد اکھنڈ بھارت (متحدہ ہندوستان) کے طور پر برقرار رکھنا نہیں چاہتے تھے لیکن سردار پٹیل نے ملک کو متحد کیا۔ سردار پٹیل نے 562 سے زیادہ دیسی ریاستوں کو ہندوستان میں شامل کیا۔راجناتھ سنگھ نے سردار پٹیل کی قیادت کی ستائش کی اور کہا کہ حیدرآباد ریاست کو ملک کا اٹوٹ حصہ بنانے کا سہرا سردار پٹیل کے سر جاتا ہے۔ انہوں نے اس موقع پر تلگو زبان میں دوڑ میں شامل افراد کو حلف دلایااور خود بھی اس دوڑ میں حصہ لیا۔ اس موقع پر بی جے پی کے قومی نائب صدر و رکن پارلیمنٹ بنڈارو دتاتریا، کشن ریڈی اور دوسرے موجود تھے۔

...


Advertisment

Advertisment