Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 01:46 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

وادی کشمیر میں وقفہ وقفہ سے بارش کا سلسلہ جاری

 

بالائی علاقوں میں برفباری، سردی کی شدت میں اضافہ

سری نگر ، 24اکتوبر (یو این آئی) سیلاب زدہ وادء کشمیر میں گذشتہ رات سے وقفہ وقفہ سے بارش کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے میں پوری وادی شدید سردی کی لپیٹ میں آگئی ہے۔ رپورٹوں کے مطابق وادی کے بالائی علاقوں میں تازہ برفباری ہوئی ہے۔ وادی کے بالائی اور میدانی علاقو ں میں لوگوں نے سردی سے بچنے کیلئے روایتی طور پر کانگڑیوں اور گرم کپڑوں کا استعمال شروع کردیا ہے۔ سردی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی وادی بھر میں کانگڑیوں میں استعمال ہونے والے کوئلے میں فی کونٹل پانچ سو سے چھ سو روپے تک کا ریکارڈ اضافہ ہوگیا ہے۔ اگرچہ وادء کشمیر اکتوبر کے اوائل میں ہی سردی کی لپیٹ میں آگیا تاہم اب ہر گذرتے دن کے ساتھ سردی کی لہر شدت اختیار کررہی ہے۔ کڑاکے کی سردی کی لہر شروع ہونے کے نتیجے میں نہ صرف معمولات زندگی پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں بلکہ سیلاب متاثرین میں بھی بے چینی کی لہر دوڑی ہوئی ہے۔ رپورٹوں کے مطابق ہزاروں کنبے جن کے مکانات حالیہ تباہ کن سیلاب سے زمین بوس ہوچکے ہیں، ریلیف کیمپوں اور خیموں میں سرچھپائے بیٹھے ہیں۔ وادی میں قبل از وقت سردیاں شروع ہونے کی وجہ سے یہ لوگ مایوسی اور بے چینی کا شکار ہوگئے ہیں۔ اگرچہ وزیر اعظم نریندر مودی نے دیوالی کے موقع پر سیلاب سے تباہ ہوئے مکانات کیلئے 570 کروڑ روپے پیکیج کا اعلان کیا، تاہم متاثرین کا کہنا ہے کہ امدادی رقم مزید کسی تاخیر کے بغیر اْن تک پہنچائی جائے تاکہ وہ سردیوں سے بچنے کا انتظام کرسکیں۔ ریاستی حکومت کے مطابق مطابق سیلاب کے باعث ریاست میں 83 ہزار سے زائد پکے رہائشی مکانات مکمل طور پر تباہ ہوچکے ہیں جبکہ 96 ہزار پکے رہائشی مکانات کو جزوی طور پر نقصان پہنچا ہے۔ اس کے علاوہ 21 ہزار سے زائد نیم پکے مکانات مکمل طور پر تباہ ہوچکے ہیں جبکہ 54 ہزار سے زائد نیم پکے مکانات کو جزوی طور پر نقصان پہنچا۔ دریں اثنا محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے بتایا کہ اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران جموں وکشمیر میں چند ایک مقامات پر گرج چمک کے ساتھ مزید بارش ہوسکتی ہے۔

 

...


Advertisment

Advertisment