Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 02:31 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

جموں و کشمیر کے سیلاب زدگان کی ہرممکن مدد کی جائے گی

 

ہند۔تبت سرحدی پولیس کے یوم تاسیس کی تقریب میں شرکت کرنے کے بعد نامہ نگاروں کے سوالوں کے جواب میں مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کا بیان

نئی دہلی، 24 اکتوبر (ایجنسیاں) مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے اپوزیشن پارٹیوں کے ان الزامات کی تردید کی ہے کہ وزیراعظم نریندر مودی نے جموں و کشمیر میں سیلاب زدگان کی بازآبادکاری کے لئے بہت کم رقم کا اعلان کرکے ان کے ساتھ مذاق کیا ہے۔مسٹر سنگھ نے گریٹر نوئیڈا کے لکھناؤلی کیمپ میں ہند۔تبت سرحدی پولیس (آئی ٹی بی پی) کے یوم تاسیس کی تقریب میں شرکت کرنے کے بعد نامہ نگاروں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ جموں و کشمیر کے سیلاب زدگان کے لئے جتنا دینا چاہئے تھا، اتنا دیا گیا ہے۔ اگر آگے بھی ضرورت ہوگی تو حکومت وہاں راحت اور بازآبادکاری کے لئے مدد دے گی۔مسٹر مودی نے کل دیوالی کے موقع پر سری نگر میں سیلاب زدگان سے ملاقات کی اور انہوں نے ریاست میں سیلاب سے تباہ ہوئے گھروں کی بازآبادکاری کے لئے 570 کروڑ روپئے اور جموں۔لیہ اور سری نگر میں چھ اسپتالوں کے لئے 175 کروڑ روپئے کی مدد دینے کا اعلان کیا تھا۔ قبل ازیں گزشتہ ماہ انہوں نے سیلاب زدگان کے لئے 1000 کروڑ روپئے کے عبوری پیکج کا اعلان کیا تھا۔ ریاستی حکومت نے سیلاب زدگان کی بازآبادکاری کے لئے 44 ہزار کروڑ روپئے کا مطالبہ کیا تھا۔ جموں و کشمیر میں حکمراں نیشنل کانفرنس اور کانگریس نے وزیراعظم کی جانب سے اعلان شدہ 745 کروڑ روپئے کے پیکج کو سیلاب زدگان کے ساتھ مذاق بتایا۔ کانگریس کے کارکنوں نے کل سری نگر میں وزیراعظم کے دورہ کے خلاف مظاہرہ کیا تھا اور ان کے دیوالی کے موقع پر وادی کشمیر آنے پر ان کی منشا پر سوال اٹھایا تھا۔ دریں اثناء وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے آج کہا کہ ہندوستان چین کے ساتھ امن چاہتا ہے لیکن عزت کی قیمت پر نہیں۔سنگھ نے چین کے ساتھ حالیہ سرحدی تنازعے سے متعلق واقعات کے تناظر میں کہا کہ ہم لوگ امن چاہتے ہیں لیکن عزت کے ساتھ۔خلاف ورزی کے ساتھ امن نہیں ہو سکتی۔ہند-تبت سرحد پولیس فورس کے 53ویں یوم تاسیس کے موقع پر منعقدہ ایک پروگرام میں انہوں نے کہا کہ ایک دوسرے کا احترام انسانیت کی غیر محدود کامیابی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے واضح کر دیا ہے کہ ہندوستان اپنے تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ پرامن رشتے اور سر حدی مسائل کا پرامن حل چاہتا ہے۔وزیر داخلہ نے کہا کہ ہمارے وزیراعظم نے چین کے صدر سے درخواست کرتے ہو ئے کہا تھا کہ اگر کوئی تنازعہ ہے تو ہمیں با ت چیت کرنی چاہئے۔انہوں نے کہا کہ سرحد کے بارے میں چین اکثر سوال اٹھاتا ہے اور یہاں تک کہ ان کی اپنے ہی زمین کے علاقے میں سرحد کے قریب ہندوستان کی طرف سے بنیا دی ڈھانچہ کی تعمیر کی کوششوں پر بھی اعتراض جتاتا ہے۔پاکستان کے تناظر میں سنگھ نے کہا کہ اس کے پڑوسی ملک کو سرحد ی چوکیوں اور شہری علاقوں پر فائرنگ بند کرنی چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دیوالی سے ایک دن پہلے بھی جموں اور کشمیر کے حد سے لگے شہری علاقوں پر فائرنگ کی۔ایسے واقعات پر انہوں نے کہاکہ پاکستان کی طرف سے جنگ بندی کی خلاف ورزی اور چین کی جانب سے سرحدی تنازعہ پیدا کئے جانے پرہم دلبرداشتہ اور غصہ محسوس کرتے ہیں۔راج ناتھ سنگھ نے کہا کہ پاکستان نے دیوالی کے موقع پر بھی شہریوں پر فائرنگ کی اور تہوار تک کا احترام نہیں کیا۔پاکستان کو اس سے بچنا چاہئے۔میں پاکستان سے کہنا چاہتا ہوں کہ وہ جنگ بندی کی مسلسل خلاف ورزی بند کرے۔انہوں نے خبردار کیا کہ پاکستان کو یہ معلوم ہونا چاہئے کہ سرحد کی نگرانی کر رہے ہماری سیکورٹی فورسز کسی بھی کا روائی کا مناسب جواب دینے کے مکمل اہل ہیں۔کشمیر مسئلے کو عالمی مسئلہ بنانے کی کوشش میں اس معاملے کو اقوام متحدہ میں اٹھانے کے پاکستان کے حالیہ اقدامات کو مسترد کرتے ہوئے سنگھ نے کہا کہ اس معاملے سے متعلق تمام باتیں دوطرفہ مذاکرات ہی سے سلجھائے جا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت ہندوستان کی علاقائی سالمیت کو یقینی بنائے گی اور ملک کے احترام کے ساتھ کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔بعد میں نامہ نگاروں سے بات چیت میں وزیر داخلہ نے کہا کہ ہندوستان کبھی جنگ بندی کی خلاف ورزی نہیں کرتا ہے اور امن میں یقین رکھتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر ملک کی عوام ذات، مذہب اور فرقے سے اوپر اٹھ کر آگے بڑھے تو کوئی ہماری طرف آنکھ اٹھانے کی ہمت نہیں کر سکتا ہے۔ملک کی پہاڑی سرحدوں کی حفاظت کے لئے آئی ٹی بی پی کے کردار کی تعریف کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ حکومت اس سیکو رٹی کے جوانو ں کی فلاح کے لئے تمام ا مدا د مہیا کرائے گی۔

 

...


Advertisment

Advertisment