Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 11:22 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

دن دہاڑے مندر میں ڈکیتی،جین سماج کے لوگوں کا کوتوالی میں ہنگامہ

 

دھن تیرس کے موقع پر ہتھیار بند بدمعاشوں نے جین مندر کی خادمہ کو یرغمال بناکر مندر میں رکھی واسو پجیہ ناتھ کی دھات کی قیمتی مورتی کو لوٹا

یاسر عثمانی

دیوبند،21؍اکتوبر(ایس ٹی بیورو)اکثریتی فرقہ کے لوگوں کے تہوار دھن تیرس کے موقع پر ہتھیار بند بدمعاشوں نے جین مندر کی خادمہ کو یرغمال بناکر مندر میں رکھی واسو پجیہ ناتھ کی دھات کی قیمتی کی مورتی لوٹ لے گئے۔جبکہ بدمعاشوں نے اسی مقام پر رکھی دوسری مورتیوں کو ہاتھ تک نہیں لگایا۔ دن دہاڑے مندر میں ہوئی اس ڈکیتی کے بعد جین سماج کے لوگوں نے کوتوالی میں پہنچ کر ہنگامہ کرتے ہوئے بدمعاشوں کی گرفتاری کی مانگ کی۔موقع پر پہنچے ایس پی دیہات نے فرنگر پرنٹ ایکسپرٹ کو بلاتے ہوئے جین جلد واردات کاخلاصہ کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ آج صبح قریب ساڑھے دس بجے خاکی وردی سے پور ی طرح بے خوف ہوچکے کالی پلسر پر سوار بدمعاش محلہ نیچل گڈھ میں واقع دگمبھرجین مندر میں جاگھسے،اس وقت مندر کی خادمہ محلہ روی داس مارگ کی باشندہ کیلا دیوی صاف صفائی کے کاموں میں لگی ہوئی تھی ،اچانک مندر میں گھسے ہتھیار بند تین بدمعاشوں نے کیلا دیوی کو گن پوائنٹ لیتے ہوئے یرغمال بنالیااور اس کے ہاتھ پاؤں باندھ کر و منہ پر ٹیپ لگا کرمندر کے ایک کونے میں بنے چھوٹے سے کمرے میں بندکردیا۔اس کے بعد بے خوف بدمعاشوں نے جین سماج کی مورتیوں کے آگے لگے موٹے موٹے شیشوں کو طمنچہ کی بٹ سے توڑدیا اور وہاں رکھی واسو پجیہ ناتھ کی تقریباً پچیس سال پرانی اصلی دھات سے بنی سات انچ کی مورتی اٹھا کر فرار ہوگئے۔حیرت کی بات یہ ہے کہ اسی مقام پر جین سماج کی 6؍قیمتی چاندی کی مورتیاں سمیت کئی دیگر اہم نیلو کی مورتیاں تھیں لیکن بدمعاشوں نے انہیں ہاتھ تک نہیں لگایا۔ کچھ دیر بعد پوجا وغیرہ کرنے کی غرض سے مندر میں آئے جین سماج لوگ مندر کے اندر کامنظر دیکھ کر حیرت زدہ رہ گئے اورانہیں کمرے میں بندخادمہ کیلا دیوی کوآزاد کرایا،جس کے بعد کیلا دیوی نے پورے واقعہ کے بابت تفصیلی معلومات لوگوں کو فراہم کرائیں۔ دن دہاڑے جین مندر میں ہوئی ڈکیتی کی اس واردات سے جین سماج کے لوگوں میں غم وغصہ پھیل گیا۔ کافی تعداد میں مشتعل سماج کے لوگوں نے کوتوالی پہنچ کر پولیس انتظامیہ کے خلاف جم کر نعرے بازی کرتے ہوئے بدمعاشوں کو گرفتارکرنے کی مانگ کی۔مشتعل لوگوں کا کہناتھاکہ پولیس کی لاپرواہی اورتساہلی کے سبب بدمعاش مندر کی کروڑوں روپیہ کی قیمتی مورتی لے گئے ہیں۔ دن دہاڑے جین سماج میں ہوئی ڈکیتی کے واردات کے اطلاع ملتے ہی پولیس انتظامیہ کے ہوش اڑ گئے آناً فاناً مقامی افسران کے ساتھ ایس پی دیہات ڈاکٹر دھرم ویر سنگھ بھی موقع پر پہنچ گئے ۔ ایس پی دیہات نے فرنگر پرنٹ ایکسپرٹ کو موقع پر بلاتے ہوئے جین سماج کے لوگوں کو ڈکیتی کاجلد خلاصہ کرنے اوربدمعاشوں کی گرفتار کرنے کی یقین دہانی کرائی۔ پولیس نے جین سماج کے صدر پروین کی تحریر پر نامعلوم بدمعاشوں کے خلاف مقدمہ درج کرلیاہے۔خیال رہے کہ 23؍ مارچ 2010ء کو محلہ چاہ پارس میں واقع جین مندر میں سے بھی بے خوف بدمعاش کروڑوں روپیہ کی قیمتی مورتی چوری کرکے لے جاچکے ہیں،جس کاخلاصہ پولیس آج تک نہیں کرپائی ہے۔

 

...


Advertisment

Advertisment