Today: Tuesday, September, 25, 2018 Last Update: 06:18 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

فرقہ وارانہ ماحول سیکولرازم اور جمہوری نظام کےلئے خطرناک: اے سعید

نئی دہلی، 7 دسمبر(ایس ٹی بیورو)ملک میں فرقہ ورانہ ماحول اور فرقہ پرستوں کے حوصلے بلند ہونا ملک کے سیکولرازم اور جمہوری نظام کےلئے خطرناک ہے۔ ہندوستان ایک سیکولر اور رواداری کاملک ہے، لیکن بی جے پی اورآرایس ایس کے لیڈران نے ملک کی گنگا جمنی تہذیب کو زہر آلود کرکے عوام کے درمیان نفرت کا زہر گھول دیا ہے۔یہ باتیں سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا(ایس ڈی پی آئی) کے قومی صدر اے سعید نے آج یہاں پریس کلب آف انڈیا میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔اس موقع پر نائب صدر ایڈوکیٹ شرف الدین، جنرل سکریٹری الیاس تھمبے اور محمد شفیع موجود تھے۔ انہوں نےبتایاکہ یہ مہم 10دسمبر کو بنگلور میں ایک کانفرنس کے ساتھ شروع ہو گی اور 31دسمبر 2015تک جاری رہے گی۔انہوں نے یہ بھی کہاکہ اس مہم کے تحت 21 دسمبر کوپارلیمنٹ مارچ بھی نکالا جائے گا۔اس کے علاوہ جے پور، کولکاتا، بنگلور، علی گڑھ، لکھنو¿، پٹنہ اور ممبئی سمیت پورے ملک میں سیمینار اور ساتھ ہی ریاستی کمیٹیوں کی طرف سے دیگر پروگرام بھی منعقد کئے جائیںگے۔ 
اے سعید نے مہم کے مقاصد پر روشنی ڈالتے ہوئے کہاکہ ملک میںبگڑے ہوئے سماجی اور سیاسی حالات کی طرف لوگوں کو متوجہ کرنا اورعوام بالخصوص اقلیتوں اور دبے کچلے لوگوں میں اعتماد،ہمت اور حوصلہ پیدا کرناہے۔مرکز میں مودی سرکار جب سے اقتدار میں آئی ہے، جب سے منافرت پھیلائی جارہی ہے اور ترقیاتی ایجنڈوں کو چھوڑد یا گیاہے جبکہ لوک سبھا الیکشن سے قبل ’سب کا ساتھ، سب کا وکاس‘ کا نعرہ دیتے ہوئے ملک کو مزید ترقی یافتہ بنانے، مہنگائی روکنے، کالادھن واپس لینے جیسے متعدد اخواب دکھائے گئے تھے۔بی جے پی کے مر کزی و ریاستی وزراء، ممبران پارلیمنٹ اور مودی سرکارکے ذریعہ مقرر کئے گئے مختلف ریاستوں میں آئینی عہدے دار اور گورنر بھی پے درپے متنازعہ بیانات دے کر ملک کو تقسیم کرنے کاکام کررہے ہیں، جو گنگاجمنی تہذیب کےلئے انتہائی خطرناک ہیں۔ 
 ایس ڈی پی آئی کے نائب صدرایڈوکیٹ شرف الدین احمد نے کہا کہ حالیہ دنوں میں’ ’عدم برداشت “جیسا لفظ ملک میں بہت زیادہ موضوع بحث بناہوا ہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی سمیت آر ایس ایس اور بی جے پی لیڈر صرف زبان سے یہ ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں کہ ہندوستان ایک سیکولر اور رواداری کا ملک ہے۔
 لیکن ان کے عمل اور کردار سے سیکولرروایات ،بھائی چارگی کی کوئی شائبہ بھی نظر نہیں آرہا ہے،یہ افسوسناک ہے۔ جنرل سکریٹری محمد شفیع نے کہاکہ ملک میں بدامنی پیدا کی جارہی ہے اور ملک کے مختلف حصوں میں گائے کی حفاظت کے نام پرمسلمانوں کوہراساں کیاجارہا ہے۔ دلتوں کا سرعام قتل اور پٹائی کی جارہی ہے۔ اقلیتی طبقہ خوف وہراس کے ماحول میں جی رہا ہے اور برسراقتدار جماعت کو اس سے کوئی سروکار نہیں ہے۔ محمد شفیع نے دانشور، ادیب، مصنف، صحافی اور سماجی کارکنان کو ڈرانے اور دھمکانے اور انہیں نشانہ بنانے پر بھی تشویش کااظہار کیا۔ جنرل سکریٹری الیاس تھمبے نے بتایاکہ ایس ڈی پی آئی ملک سے نفرت کا ماحول ختم کرنے کےلئے ایس ڈی پی آئی نے عوامی اجلاس، سیمینار، کارنر میٹنگ، محلہ ڈرامہ، پوسٹر، اور مختلف قسم کے ثقافتی اور موسیقی کے پروگراموں کے ذریعے اس ملک گیر مہم کو کامیاب بنائے گی۔ 
 
...


Advertisment

Advertisment