Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 05:00 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

وقف املاک کی باز یابی کیلئے یو ایم ایف نے چھیڑی جنگ

 

دہلی کے وزیر اعلی اروند کجریوال کو وقف جائدادوں پر ناجائز قبضہ ہٹانے کیلئے یو ایم ایف قومی صدر شاہد علی ایڈوکیٹ نے پیٹیشن کی کاپی ارسال کی

شمس آغاز شمسی

نئی دہلی(ایس ٹی بیورو)یو نائیٹیڈ مسلمس فرنٹ کے قومی صدر شاہد علی ایڈوکیٹ نے وقف املاک پر ناجائز طور پر قبضہ کرنے والوں کو جگہ خالی کرانے کے لئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال کو ایک پیٹیشن ارسا ل کیا ہے جس میں اس بات کا مطالبہ کیا گیا ہے وقف کی زمین جس کی قیمت کڑوروں میں ہے اسے خالی کروایا جائے ۔مسٹر شاہد نے جانکاری دیتے ہوئے کہاکہ وقف کی جائداد کو خالی کرانے کے لئے وقف ایکٹ 1995دفعہ 54کے تحت وقف کی جائداد کوخالی کرانے کا پاور ایس ڈی ایم کے پاس ہو تاہے دہلی تقریبا ۱۰۰۰ وقف کی جائداد ایسے ہیں جنھیں خالی کرانے کا حکم 20-30قبل ہوچکا ہے لیکن اب تک خالی نہیں کرا یا گیا ہے ۔ایس ڈی ایم اس کے خلاف کارروائی نہیں کر رہی ہے جس سے نقصان مسلم عوام کاہے کیونکہ وقف کی جائدادوں پر قبضہ کی وجہ سے ہمارے علاقوں میں اسکول ،کالج واسپتال نہیں بنتے جس سے ہمارا اور ہمارے بچوں کا نقصان ہورہاہے ۔انھوں نے جانکاری دیتے ہوئے کہاکہ ایک تگڑی گاؤں ہے جہاں وقف کی 137بیگہ زمین ہے جہاں ناجائز قبضہ ہے اس زمین کو 2007 میں خالی کرانے کا حکم آگیا تھالیکن ۸ سال کا عرصہ گزر جانے کے بعد بھی اس زمین کو خالی نہیں کرایا گیا ہے ۔انھوں نے کہاکہ ہم نے اس پیٹیشن میں وزیر اعلی اروند کیجریوال سے مطالبہ کیا ہے کہ ۱۰۰۰ وقف کی جائداد جسے خالی کرانے کا حکم ہو چکاہے ان جائدادوں کو خالی کرانے کے لئے فوری طور پرایس ڈی ایم کو حکم دیں ۔مسٹر شاہد نے کہاکہ جب کسی جائداد پر اسٹے نہیں ہے تو خالی کرانے میں کون سی پریشانی لاحق ہورہی ہے وزیر اعلی کو چاہئے کہ اس پر فورا ایکشن لیتے ہوئے ان جائدادوں کو خالی کرائیں اگر وقف کی جائدادوں پر ناجائز قبضہ کو خالی کر دیا گیا تو اس سے دہلی کے بجٹ کامعاملہ بھی حل ہوسکتاہے ۔کچھ لوگ وقف کی جائداد پر قبضہ کرکے اسے فروخت کر دیتے ہیں ایسے لوگوں کے خلاف بھی کارروائی ہو اور ان جائدادوں کو بھی خالی کرایا جائے ۔اور ایس ڈی ایم ان جائدادوں کیوں خالی نہیں کراتے ہیں جس کو خالی کرانے کا حکم ہوچکاہے اسے فوری طور پر حکم دی جائے کہ اب وقف کی جائدادوں کو خالی کرائے ۔واضح رہے کہ دہلی میں وقف کی جائدادوں کو پر لوگوں نے قبضہ جمایا ہوا ہے جب وقف کی جائداد سپریم کورٹ کے مطابق وقف ہی کی رہتی ہے لیکن ان ناجائز قبضوں کو خالی کرانے کا حکم آنے بعد بھی خالی نہ کرانا افسوسناک ہے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment