Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 04:59 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

مدرسہ بورڈ کی تجدید کاری بلا کسی خوف و دباؤ کے کریں

 

اترپردیش مدرسہ بورڈ کے ایڈمٹ کارڈ آن لائن کیے جانے کامدرسہ ایسو سی ایشن کے صدر محمد اکبر ظفر نے خیر مقدم کیا

لکھنؤ یکم اپریل (پریس ریلیز)کو مدرسہ عائشہ للبنات آئی ایم روڈ جہٹا میں مدرسے کے قیام کی ساتویں سالگرہ منائی گئی۔جلسے میں کاکوری ، ملیح آباد ، ہردوئی کے مدرسہ کے ناظم شریک ہوئے۔ جلسے کی صدارت اترپردیش مدرسہ ایسو ایسی ایشن کے صدر محمد اکبر ظفر نے کی۔ نظامت کے فرائض انڈین یونین مسلم لیگ کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر محمد متین خان نے ادا کیے ، مہمان خصوصی احسان الحق ابراہیمی تھے۔ اپنے افتتاحی خطاب میں محمد اکبر ظفر نے کہا مسلمانوں کے لیے یہ دور بہت نازک ہے مرکز سے لے کر ریاستوں میں جہاں جہاں بی جے پی براجمان ہے وہاں آر ایس ایس کے ایجنڈے و نظریے کو نافذ کیا جارہا ہے ان خرافاتوں کو روکنے والا کوئی نہیں ہے مسلمانوں کی فریاد اور ان کی داد رسی کرنے والا کوئی نہیں ہے۔دراصل مسٹر مودی آہستہ آہستہ سیکولرزم اور جمہوریت و آئین ہند کو دھتا بتاتے ہوئے خالص ہندو قانون نافذ کررہے ہیں اور حیرت کی بات یہ ہے کہ مسلم ووٹوں کے ٹھیکیدار مسلمانوں کے مصنوعی ہمدرد اور مسلم ووٹ سے اپنے خاندان و اپنی ہندو قوم کی ترقی کرنے والے خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں۔ بمبئی کا سلاٹر ہاؤس ہو یا آدتیہ ناتھ کی زہر افشانی ، مایا ، نتیش ، ملائم ،ممتا سب کے سب کو لگتا ہے سانپ سونگھ گیا ہے ۔ محمد اکبر ظفر نے مزید کہا کہ ان نیتاؤں کو سانپ نہیں سونگھا ہے کیونکہ یہ ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے قانون ہیں اور یہ حضرات اپنے مذہب کے تئیں اور اپنی قوم کے تئیں بے پناہ ایماندار ہیں یہ اپنے دھرم کے پاسدار ہیں ، محمد اکبر ظفر نے مزید کہا کہ اترپردیش عربی فارسی مدرسہ بورڈ کے چیرمین پروفیسر قاضی زین الساجدین صدیقی نے اپنی تقرری ہونے کے بعد مدرسہ بورڈ میں بے پناہ اصلاح کی ہے۔مدرسہ بورڈ میں ہونے والی بد عنوانیوں کو اپنے آہنی قدموں سے کچل دیا۔ امتحان ۲۰۱۵ء کے فارم آن لائن کرکے مسلم قوم کو جدیدیت کی طرف گامزن کیا اور اب اسی فارم ایڈمٹ کارڈ آن لائن کرکے قوم کو ترقی پذیر ہونے کا اشارہ کیا ، مسلمان علم کے نام پر بہت پیچھے تھاوہ سائبر کیفے اور آن لائن کے لفظوں سے نابلد تھا مگر پروفیسر قاضی زین الساجدین صدیقی نے قوم کو دیگر اقوام کے روبرو لاکر کھڑا کردیا مگر کچھ کم فہم لوگ اس آن لائن سسٹم کو غلط ثابت کرنے کی کوشش کررہے ہیں ۔ جو مسلمانوں کو اندھیرے میں ڈھکیلنے کے مترادف ہے۔ مہمان خصوصی احسان الحق ابراہیمی نے اپنی تقریر میں بورڈ کے چیرمین پروفیسر قاضی زین الساجدین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ مدرسہ بورڈ کی تجدید کاری بلا کسی خوف و دباؤ کے کریں قوم آپ کے ساتھ ہے ۔ اپنی اختتامی تقریر میں ڈاکٹر متین خان نے طلبہ سے اپیل کی کہ وہ اپنے مدرسوں کے ناظموں سے رابطہ قائم کریں اور داخلہ کارڈ حاصل کریں اگر کسی کو کوئی زحمت ہوتی ہے تو وہ مدرسہ بورڈ کے ہیڈ کوارٹر جواہر بھون سے رابطہ قائم کرے۔اور امتحان محنت اور دل لگا کر دے۔ جلسے کا اختتام قاری محمد سعید کی دعا پر ہوا۔ جلسے میں محمد عمران ندوی، جامعہ حفصہ للبنات کے الحاج قاری رضی الدین صدیقی ، مولانا آزاد انٹر کالج کے پرنسپل قاری محمد صابر نے شرکت کی۔ جلسے کے کنوینر مسلم سماج پریشد کے صدر محمد شعیب نے تمام حاضرین کا شکریہ ادا کیا۔

...


Advertisment

Advertisment