Today: Monday, November, 19, 2018 Last Update: 10:49 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

دہلی سرکار اور کارپوریشن میں جنگ چھڑنے کاامکان


مالی مدد مانگنے گئے میئرز کو کجریوال نے نامراد واپس لوٹایا، وزیراعلیٰ نے مرکزی حکومت سے مدد ملنے کے بعد کارپوریشن کو مدد دینے کی بات کہی
نئی دہلی، 21 مارچ (یو این آئی) مالی بحران سے دو چار دہلی کے تینوں کارپوریشنوں کے میئرز کو وزیر اعلی کیجریوال نے آج یہ کہہ کر خالی ہاتھ لوٹا دیا کہ حکومت کے سامنے وسائل کو لے کر پہلے ہی بہت دقتیں ہیں۔شمالی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر یوگیندر چاندولیہ ، جنوبی دہلی میونسپل کارپوریشن کے میئر خوشی رام اور مشرقی دہلی میونسپل کارپوریشن کی میئر میناکشی نے اداروں کے سامنے درپیش سخت مالی بحران کی وجہ سے مدد مانگنے کی خاطر مسٹر کیجریوال سے دہلی سیکرٹریٹ میں ملاقات کرنے گئے تھے ۔مسٹر چندولیہ نے بتایا کہ ملاقات کے دوران وزیر اعلی سے چوتھے دہلی فنانس کمیشن کی رپورٹ کو دہلی اسمبلی میں پیش کرنے اور اس کی سفارشات کو نافذ کرنے کی مانگ کی تھی۔ انہوں نے بتایا کہ وزیر اعلی سے یہ اپیل کی گئی کہ تینوں کارپوریشن سخت اقتصادی بحران کا شکار ہیں اور انہیں دہلی حکومت سے عالمی حصص کے طور پر روکی گئی 302 کروڑ روپے کی رقم جاری کر دی جائے ۔ لیکن وزیر اعلی نے اس سے انکار کر دیا۔میئر نے بتایا کہ وزیر اعلی نے کہا کہ حکومت دہلی کے سامنے وسائل کی بہت قلت ہے اور اسے خود ہی کم سے کم پانچ ہزار کروڑ روپے چاہیے ۔اقتصادی بحران کے وجہ سے کارپوریشنز کے ملازمین کو گزشتہ کئی ماہ سے تنخواہ ملنے میں کافی دشواریاں آ رہی ہیں ۔ مسٹر چندولیہ نے کہا کہ مسٹر کیجریوال سے ملازمین سے تنخواہ کی ادائیگی کے لئے ر وپے دینے کی بات کی گئی تھی اس سے بھی انہوں نے انکار کر دیا۔مسٹر چندولیہ نے کہا کہ وزیر اعلی نے مرکزی وزارت داخلہ سے مدد مانگنے کی بات کہی ہے اور کہا ہے کہ وہاں سے جب رقم ملے گی تو وہ کارپوریشنز کو بھی مہیا کرائیں گے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment