Today: Tuesday, November, 13, 2018 Last Update: 09:04 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

مہاراشٹر کی سینا بی جے پی حکومت نے اپنا مالیاتی بجٹ پیش کیا


ممبئی 18 ارچ(یو این آئی ) مہاراشٹر کی سینا بی جے پی حکومت نے آج یہاں اقتدار کی باگ ڈور سنبھالنے کے بعد اپنا پہلا مالیاتی بجٹ برائے سال2016۔2015کا 3557کروڑ کے خسارے والا بجٹ پیش کیا ۔ وہیں وزیر مالیات نے اس میں کسی بھی قسم کا نیا ٹیکس عائد نہیں کیا البتہ بجٹ میں تاجروں کیلئے خوش خبری یہ ہے کہ یکم اگست 2015 سے مقامی طور پر وصول کیئے جانے والے ایل بی ٹی ٹیکس کا خاتمہ عمل میں آئے گا جبکہ اخراجات کا تخمینہ ایک لاکھ988 کروڑ روپیہ بتلایا گیا ہے ۔ ساتھ ہی ساتھ ریاست میں ثالہ باری کے اور خشک سالی کو دیکھتے ہوئے متعدد نئے منصوبوں کے لیئے کروڑوں روپیئے مختص کیئے گئے ہیں لیکن محکمہ اقلیتی بہبود کے سالانہ بجٹ کیلئے کوئی خاص رقم مختص نہیں کی گئی ہے البتہ مولانا آزاد مالیاتی کارپوریشن کے شیئر کیپیٹل میں دیڑھ سو کروڑ کا اضافہ کیا گیا ہے اور ممبئی میں واقع عالمی شہرت یافتہ حاجی علی درگاہ اور سنتروں کے شہر ناگپور میں واقع تاج الدین بابا کی درگاہ کی تزئین کاری کیلئے درکار رقم دیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے اس کے باوجود بھی وہ اقلیتوں کیلئے ایک طرح سے مایوس کن بجٹ قرار دیا جائے گا کیونکہ اس بجٹ میں اقلیتوں کی فلاح و بہبود کیلئے کسی اسکیم کا ذکر نہیں کیا گیا ہے البتہ ریاست میں واقع گنجان مسلم آبادی والے 440 گاوں کی ترقی کیلئے محض 25 کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔ جبکہ پسماندہ طبقات کی اّْبادی والے علاقوں کی فلاح و بہبود کیلئے مجموعی طور پر 6490 کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے ۔بجٹ میں کسانوں اور کاشتکاروں کی مختلف پالیسیوں کا بھی ذکر کیا گیا ہے اور ایک طرح سے یہ کسانوں کی موجودہ حالات کو دیکھتے ہوئے تیار کیا گیا بجٹ ہے ۔کانگریس راشٹر وادی پارٹی اور دیگر اپوزیشن پارٹیوں نے اسے عوام کی آنکھوں میں دھول جھونکنے نے والا بجٹ قرراد یا جبکہ وزیر اعلی دیوندر فڑنویس نے بجٹ پر اطمنان ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ بجٹ کی رو سے ریاست کے صنعتی اور زراعتی محکمہ میں کئی ایک ترقی کے مواقع دستیاب ہوں گے اور نئے روزگار حاصل ہوں گے۔ریاستی اسمبلی میں وزیر مالیات سدھیر منگیٹواراور قانون ساز قونسل میں ریاستی وزیر دیپک تیروسکر نے بجٹ پیش کیا جس میں نئے ٹیکس تو نہیں عائد کیئے گئے البتہ ایل بی ٹی کے خاتمہ کا اعلان کیا گیا اور یہ کہا گیا کہ ایل بی ٹی کے خاتمہ سے مقامی میونسپل کارپوریشن کو نقصان اٹھانا پڑے گا لیکن ان کی نقصان کی بھرپائی کے لیے بھی لائحہ عمل تیار کیا جا رہا ہے ۔اقلیتوں کے تعلق سے اس بجٹ میں صرف اتنا ہی کہا گیا ہے کہ مولانا آزاد کے شیئر کیپیٹل میں اضافہ ’ مذہبی مقامات کی تزئین کاری کی فہرست میں حاجی علی اور تاج الدین بابا کی درگاہ کا شامل ہونا اور مسلم اکثریتی آبادی والے دیہی علاقوں کی ترقی کیلئے پچیس کروڑ روپیہ مختص کیا جانا شامل ہے ۔اس کے علاوہ بجٹ میں اقلیتوں کی فلاح بہبود کیلئے بھی کوئی خاص تجویز نہیں رکھی گئی ہے ۔ریاست کے مختلف پروجیکٹوں کیلئے جہاں ہزاروں کروڑ روپیئے کی رقم مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے وہیں کسانوں کو فوری طور پر ان کے قرض معافی کیلئے ۱۷۱کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے جس سے مراٹھواڑہ اور ودربھ کے دو لاکھ ۷۰ہزار کسانوں کو فیض حاصل ہو گا ۔حکومت نے شہری اور دیہی علاقوں میں صحت کی انسٹی ٹیوٹ بنانے کا بھی اعلان کیا ہے اس کیلئے نیشنل ہیلتھ مشن کے تحت 1996کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے ۔وزیر مالیات نے پروفیشنل ٹیکس کی شرح میں بھی اضافہ کیا ہے اور اب ساڑھے سات ہزار کے ٹرن اوور پر ہی پروفیشنل ٹیکس بھرے جا سکیں گے اورخاص کر پیشہ ورانہ خواتین جن کی ماہانہ تنخواہ دس ہزار ہو گی انہیں ہی پروفیشنل ٹیکس ادا کرنا ہو گا جبکہ ماضی میں یہ شرح ساڑھے سات ہزار روپیہ تھی ۔نئی ممبئی میں تعمیر ہونے والے انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے تعلق سے انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے اس کی تعمیر کی اجازت دی ہے اور جگہ کی دستیابی کیلئے 14574کروڑ کی رقم مختص کی گئی ہے اسی طرح سے ریاست میں چھ نئی بندرگاہیں بھی زیر تعمیر ہیں جس کیلئے اضافی بیس کروڑ روپیہ بھی دیا جانا منظور کیا گیا ہے ۔سڑکوں کی تعمیر کیلئے 2876کروڑ کی رقم مختص کی گئی ہے جبکہ ضلع پریشد کے تحت آنے والی سڑکوں کی تعمیر کیلئے 436کروڑ روپیہ مختص کیا گیا ہے ۔ریاست میں زالا و باری اور قحط سالی سے نپٹنے کیلے مختلف اسکیموں کا اعلان کیا گیا ہے اور اس کیلئے 403کروڑ روپیوں کی رقم مختص کی گئی ہے ۔بجٹ میں اہلیان ممبئی کیلئے بھی خوش خبری ہے اور وزیر مالیات نے ممبئی کے مختلف علاقوں میں وائی فائی سروس نصب کیئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔اسی طرح سے ممبئی میٹرو لائن کے تیسرے پروجیکٹ کیلئے ریاستی حکومت نے 109کروڑ روپیہ مختص کیا ہے جبکہ ناگپور میٹرو ریل کیلئے 197کروڑ روپیہ اور پونہ میٹرو لائن کیلئے 174 کروڑ روپیہ مختص کیا ہے ۔وزیر مالیات نے آدرش گاوں نامی اسکیم بھی آمدار آدرش گاوں یوجنا والی نئی اسکیم کو شروع کرنے کا اعلان کیا ہے جس کے تحت ہر رکن اسمبلی کو تین گاوں میں اپنا پچاس فیصد ایم ایل اے فنڈ اور پچاس فیصد ریاستی حکومت دے گی ۔وزیر مالیات نے یہ بھی کہا کہ خط افلاس سے کم سطح پر زندگی گزارنے والے افراد کیلئے پنڈت دین دیال اپادھیائے گھر کول یوجنا تشکیل دی گئی ہے اس کیلئے مستحق افراد کو پچاس ہزار روپیہ زمین کی خریداری کیلئے دیا جائے گا اور ایک لاکھ افراد کو اس سے فائدہ حاصل ہو گا ۔ حکومت نے اس کیلئے 884کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا ہے ۔پاورلوم کے شعبہ میں بجلی میں سبسیڈی دینے کا وعدہ کیا گیا ہے اور 1232کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے ۔سینا بی جے پی حکومت کا پہلا بجٹ پیش کرنے والے وزیر مالیات منگنٹی وار سفید کرتا پائجامہ اور چاکلیٹی کلر کی جیکیٹ پہنے ہوئے تھے بجٹ پیش کرنے کے دوران انہوں نے متعدد مرتبہ مراٹھی کے اشعار بھی پڑھے اور جب انہوں نے مسلم آبادی والے گاوں کی ترقی کا اعلان کیا تو انہوں نے یہ شعر پڑھا ہندو مسلم سکھ عیسائی سب ہیں بھائی بھائی ۔۔۔ہم سب کو آپس میں لڑاتی ہے کانگریس آئی جس پر پورا ایوان قہقہہ زار ہو گیا ۔بجٹ میں بھیونڈی مالیگاوں ’ اچل کرنجی اور اورنگ آباد میں بھی ترقیاتی منصوبے متعارف کرنے کا اعلان کیا گیا ہے لیکن بجٹ میں اس کیلئے کوئی خاص رقم مختص نہیں کی گئی ہے ۔ریاست میں سیاحت کو فروغ دینے کیلئے چند مخصوص قلعوں کی حفاظت کیلئے پچاس کروڑ روپیہ مختص کیا گیا ہے جبکہ سنجے گاندھی نیشنل پارک کے لئے ۱۰۰کروڑ روپیہ مختص کیا گیا ہے ساتھ ہی ساتھ تمام اضلاع میں اتم راو پاٹل فوریسٹ پارک کھولنے کا بھی اعلان کیا گیا ہے ۔بجٹ میں ایئر پورٹ کی ترقی کیلئے ۹۱کروڑ روپیہ مختص کیا گیا ہے وہیں وزیر مالیات نے اعلان کیا کہ اب کوئی بھی تعلیم سے محروم نہیں رہے گا اس کیلئے حکومت خبرگیری لیتی رہے گی۔ناسک میں ہونے والے کمبھ کے میلئے کیلئے ۲۳۷۸کروڑ روپیہ مختص کیئے جانے کا اعلان کیا گیا ہے ساتھ ہی ساتھ امراوتی ’ ناسک ’ ناگپور اور اورنگ آباد شہروں میں سی سی ٹی وی نصب کرنے کا بھی اعلان کیا گیا ہے ۔فیس بک اور شوشل نیٹ ورکنگ سائٹ کے ذریعے نازیبا اور دل آزار مزامین کی ترسیل کی روک تھام کیلئے بھی حکومت نے ہر ضلع میں سائبر کرائم لیباریٹری بنانے کا اعلان کیا ہے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment