Today: Wednesday, November, 14, 2018 Last Update: 01:18 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

آصف محمدخان نے آج پھر روکی ’آپ‘ کی سانس

 

پریس کانفرنس میں ثالث ایڈیٹر کی نوکری چلی جانے کے بہانے نہیں جاری کیا اسٹنگ* لولی اور ہارون یوسف نے ’آپ‘ کا ساتھ دینے سے کیاتھاانکار: آصف خان
نثار احمدخان

نئی دہلی، 13مارچ (ایس ٹی بیورو) آصف محمدخان نے آج پھر عام آدمی پارٹی (آپ) کی سانس روک دی ہے اور ان کی پریشانی میں اضافہ کردیا ہے۔ آصف کے دعوے سے عام آدمی پارٹی میں اندرونی رسہ کشی جاری ہے اور پارٹی مشکل حالات سے گذر رہی ہے۔ عام آدمی پارٹی کے سینئرلیڈر سنجے سنگھ اور منیش سسودیا کا اسٹنگ کرنے کا دعوی کرنے والے کانگریس کے سابق ممبر اسمبلی آصف محمد خان نے آج بھی ٹیپ جاری نہیں کیاہے۔ آج انہوں نے کالندی کنج واقع اپنی رہائش گاہ پر منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران ’آپ‘ کے لیڈروں کیخلاف اسٹنگ کو دکھانے کا وعدہ کیا تھا۔ انہوں نے جمعہ کے روز پریس کانفرنس تو کی، لیکن اسٹنگ کا ٹیپ جاری نہیں کیا۔ انہوں نے کہا ’’میں نے سنجے سنگھ کا اسٹنگ کیا۔میٹنگ نوئیڈا میں ایک میڈیا ہاؤس کے ایڈیٹر کے گھر ہوئی تھی، میں نہیں چاہتا کہ اس ایڈیٹر کی نوکری چلی جائے، اس لئے میں ٹیپ جاری نہیں کر رہاہوں۔‘‘ پوری پریس کانفرنس کے دوران آصف قلم ڈرائیو دکھاتے رہے، جس میں انہوں نے ٹیپ رکھنے کا دعوی کیا ہے۔
آصف محمدخان نے پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ سنجے سنگھ نے تسلیم کرلیا ہے کہ انہوں نے میرے ساتھ ملاقات کی تھی۔ انہوں نے کہا’’ میں نے سنا ہے کہ ایک ٹی وی چینل پر سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ آصف کے ساتھ ان کی ملاقات ہوئی ہے، وہ کہہ رہے ہیں کہ اگر ٹیپ جاری ہوا، تو ایڈیٹر کی نوکری چلی جائے گی، اس لئے میں ٹیپ جاری نہیں کر رہا ہوں۔‘‘ آصف نے کہا کہ وقت آنے پر وہ ٹیپ جاری کریں گے۔ دوسری جانب ’آپ‘لیڈر سنجے سنگھ نے کہا کہ اگر کانگریسی لیڈر آصف محمدخان کا الزام ثابت ہو گیا تو پھر وہ چہرے پر سیاہی لگا کر سیاست چھوڑ دیں گے۔ تاہم سنجے سنگھ نے اعتراف کیا ہے کہ ان کی آصف کے ساتھ بات ہوئی تھی اور اس ملاقات میں ایک ایڈیٹر نے مدد کی تھی۔ سنجے سنگھ آج دوپہر12بجے نارتھ ایونیو کے قریب ایک پارک میں کرکٹ کھیلتے نظر آئے۔ سنجے سنگھ نے کہا’’ آصف مجھے جھوٹا ثابت کریں، میں ریٹائرمنٹ لینے کو تیار ہوں۔ ریٹائرمنٹ لینے کے بعد کرکٹ کھیلوں گا۔ آصف میڈیا کو بیوقوف بنا رہے ہیں اور میں نے کوئی لین دین کی بات نہیں کہی ہے۔ آپ ثابت کریں تو سیاست سے ریٹائرمنٹ لے لوں گا، اس لئے سوچ رہا ہوں کہ کرکٹ ہی کھیلوں، لہٰذا پریکٹس کر رہا ہوں۔ وہیں آصف محمدخان نے پریس کانفرنس میں کہا کہ سنجے سنگھ اور دیگر ’آپ‘ لیڈروں کی ریکارڈنگ انہوں نے ہاتھ کی گھڑی سے کی ہے۔ ان کے پاس 25 منٹ کی ریکارڈنگ ہے۔اس ریکارڈنگ میں ’آپ‘ رہنماؤں، ایڈیٹر اور ان کی بات چیت ہے۔ آصف نے کہا ’’میں نے ’آپ‘ لیڈروں سے ہوئی بات چیت کی بات پارٹی رہنماؤں کو بھی بتائی تھی۔‘‘ کانگریس لیڈر آصف نے دعویٰ کیا ہے کہ ان کیآپ‘ رہنماؤں کے ساتھ دو میٹنگ ہوئی تھی۔ میٹنگ میں ’آپ‘ لیڈروں نے ان سے کانگریس کو توڑنے کیلئے کہا تھا، جس کے بدلے انہیں نئی سرکار میں وزیر بنائے جانے کی پیشکش کی گئی تھی۔ آصف نے کہا ’’میٹنگیں ستمبر میں ہوئی تھیں، پہلی میٹنگ میں مجھے سنجے سنگھ اور منیش سسودیا نے کانگریس اور ’آپکے درمیان اتحاد کروانے کیلئے کہا تھا۔ میں نے یہ اطلاع پارٹی لیڈرشپ کو دی تھی، لیکن اروندر سنگھ لولی اور ہارون یوسف نے کہا کہ سونیا-راہل گاندھی کہہ چکے ہیں کہ اتحاد کا کوئی ارادہ نہیں ہے اور ہم ہائی کمان کے حکم کیخلاف جا کر کام نہیں کریں گے۔ ہارون یوسف اور اروندر سنگھ لولی نے مجھے اس مسئلے کو ڈراپ کرنے کیلئے کہا تھا۔
آصف خان کے مطابق اس کے بعد ایک ہفتے کے اندر ’آپ‘ رہنماؤں کے ساتھ ایک اور میٹنگ ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ جب میں نے ان سے کہا کہ پارٹی ہائی کمان نے اتحاد کیلئے انکار کر دیا ہے تو انہوں نے مجھ سے کہا کہ کسی طرح 6 ممبران اسمبلی کو لے آؤ۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے مسلم لیڈر بی جے پی جوائن نہیں کریں گے۔ انہوں نے مجھے کابینی وزیر کے عہدے کی پیشکش کی، اس کے ساتھ ہی کہا کہ ان 6 ارکان اسمبلی کو بھی کہیں نہ کہیں جگہ دی جائے گی۔ یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ بدھ کو ہی اروند کجریوال-راجیش گرگ کے درمیان بات چیت کا ٹیپ سامنے آیا تھا۔ اس ٹیپ کے آنے کے بعد ’آپ‘ کی مہاراشٹر یونٹ کی لیڈر انجلی دمانیا نے پارٹی سے استعفیٰ دے دیا تھا۔ کانگریس کے سابق ممبر اسمبلی آصف خان کے اس دعوے سے پہلے بدھ کو آپ کے دو سینئر لیڈر یوگیندر یادو اور پرشانت بھوشن نے کھلا خط لکھاتھا، جس میں دعوی کیا گیا تھا کہ لوک سبھا میں شکست کے بعد کجریوال پھر سے کانگریس کی حمایت سے سرکار بنانا چاہتے تھے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment