Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 09:56 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

جرمنی انٹرن شپ معاملہ : غلط فہمی کی وجہ سے ہواہے تنازعہ ، جلد ختم ہوجائے گا: وی کے سنگھ


نئی دہلی10مارچ(آئی این ایس انڈیا) جرمنی کی ایک پروفیسر کی طرف سے ہندوستان میں عصمت دری کے مسئلے کا حوالہ دیتے ہوئے ایک ہندوستانی طالب علم کے انٹرن شپ کی درخواست کو مسترد کرنے کے پیش نظر مرکزی وزیر جنرل(ریٹائرڈ)وی کے سنگھ نے آج کہا کہ اختلافات ہوتے ہیں اور غلط فہمی کی وجہ سے پیدا ہوئی چیزیں ختم ہو جائیں گی۔وزیر مملکت برائے امور خارجہ سنگھ نے کہا کہ دوسرے ممالک میں بھی اختلافات ہوتے ہیں،بات اختلافات کی نہیں بلکہ حتمی نتائج کی ہے،مجھے پورا یقین ہے کہ ناسمجھی اور غلط فہمی کی وجہ سے پیدا ہو گئی کچھ چیزیں ختم ہو جائیں گی،یہ کرنا ہمارا کام نہیں ہے۔جب نامہ نگاروں نے پوچھا کہ کیا حکومتی سطح پر اس موضوع کو اٹھایا جانا چاہئے؟ تو انہوں نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ بہت سے چیزیں ہو رہی ہیں جن پر وزارت کے دائرے کے باہر بات چیت کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔سنگھ نے کہا کہ جہاں تک اس موضوع کی بات ہے تو میڈیا کی ذمہ داری ہے۔جرمنی کی لیپجگ یونیورسٹی کی پروفیسر انیٹے بیک سکنجر نے ہندوستانی طالب علم کی انٹرن شپ عرضی مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ کسی ہندوستانی مرد طالب علم کو انٹرن شپ نہیں کراتی۔خبر کے مطابق انہوں نے ای میل میں لکھا تھا کہ بدقسمتی سے میں کسی ہندوستانی مرد طالب علم کو انٹرن شپ نہیں کراتی،ہم ہندوستان میں عصمت دری کے مسئلہ کے بارے میں کافی سنتے ہیں، جس کی میں حمایت نہیں کر سکتی،میرے گروپ میں متعدد خواتین طالب علم ہیں، اس لئے مجھے لگتا ہے کہ میں اس رویہ کی حمایت نہیں کر سکتی۔واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ہندوستان میں جرمنی کے سفیر مائیکل ا سٹینر نے پروفیسر کو سخت الفاظ میں خط لکھا جس کے بعد خاتون پروفیسر نے اپنے غلط بیان کے لئے معافی مانگی۔اسٹینر نے پروفیسر کو لکھے خط میں کہا کہ یہ بات واضح رہے کہ ہندوستان زانیوں کا ملک نہیں ہے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment