Today: Tuesday, September, 25, 2018 Last Update: 06:05 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

پندرہ اور قیدیوں کی رہائی میں مفتی سرکار؟

 

رہائی کیلئے محکمہ داخلہ کا کلیئرنس ، ڈی جی پی جموں و کشمیر نے کی خبروں کی تردید ، نازک فیصلہ وزارت داخلہ کو اعتماد میں لیکر کئے جائیں گے : مفتی سرکار سیاسی قیدیوں کی رہائی کی بات ضرور ہوئی تھی ، معاہدہ میں اس پر دستخط نہیں ہوا: بی جے پی ذرائع ، تین سال سے مفتی سعید سے نہیں ہوئی ملاقات: راجناتھ سنگھ
محمداحمد

نئی دہلی ،10مارچ( ایس ٹی بیورو) بنیاد پرست علیحدگی پسند لیڈر مسرت عالم کی رہائی پر شروع ہوا طوفان تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے ۔بی جے پی پوری طرح بیک فٹ پر ہے اور پارلیمنٹ میں اسے جواب دیتے ہوئے نہیں بن رہا ہے ۔ اپوزیشن پارٹیاں بی جے پی کی ساری دلیلوں سے غیر مطمئن ہیں ۔ وہیں ان ساری چیزوں سے لاپرواہ مفتی حکومت 15 مشتبہ پاکستانی دہشت گردوں کی رہائی کی تیاری کر رہی ہے۔ایک انگریزی نیوز چینل کی رپورٹ کے ذرائع کے مطابق سری نگر کی جیل میں بند پاکستان کے ان 15 مشتبہ دہشت گردوں کی رہائی کیلئے محکمہ داخلہ کلیئرنس دے چکا ہے۔ ان 15 میں سے پانچ لشکر طیبہ کے خونخوار دہشت گرد بھی شامل ہیں۔ ان تمام کو اسلحہ قانون کے تحت گرفتار کیا گیا تھا۔اگرچہ جموں و کشمیر کے ڈی جی پی ان مشتبہ پاکستانی دہشت گردوں کو چھوڑے جانے کی خبروں کی تردید کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ فی الحال کسی بھی قیدی کو رہا نہیں کیا جائیگا۔ادھر مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے بھی صاف کیا ہے کہ انکی حال کے دنوں میں مفتی سعید سے کوئی ملاقات نہیں ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ مفتی سعید سے ان کے ملے 3 سال سے زیادہ کا عرصہ ہوگیا ہوگا۔ مسرت کی رہائی پر پارلیمنٹ میں حکومت پھنسی ہوئی ہے ۔ اس درمیان مفتی حکومت نے بھی وزارت داخلہ کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اس کی اجازت کے بغیر کسی قیدی کو رہا نہیں کیا جائیگا۔ ذرائع کے مطابق اس میں ان 15 کو بھی نہ چھوڑنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ ریاست کے وزیر اعلیٰ اور پی ڈی پی لیڈر مفتی اپنی تصویر چمکانے میں عالم کی رہائی کا استعمال کر رہے ہیں۔ عالم نے 2010 میں کشمیر میں بھارت مخالف مظاہروں کا انعقاد کیا تھا، جن میں 112 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔آنے والے دنوں میں بی جے پی کیلئے ریاست میں مشکلات بڑھ سکتی ہیں کیونکہ مرکزی حکومت کے ذرائع نے بتایا ہے کہ مفتی اب گزشتہ 22 برسوں سے سرینگر جیل میں بند عاشق حسین پھکتو کو رہا کروانے کی کوشش کر رہے ہیں، جو وادی میں سب سے طویل وقت تک جیل میں رہنے والا قیدی ہے۔ بی جے پی کے ایک سینئر رہنما نے قبول کیا کہ سیاسی قیدیوں کی رہائی کے معاملے پر پی ڈی پی اور بی جے پی کے درمیان کامن منیمم پروگرام پر بات چیت کرتے وقت بحث ہوئی تھی، لیکن انہوں نے کہا کہ اس کو لیکر کوئی معاہدہ نہیں ہوا تھا۔ انہوں نے کہاکہ ، اس معاملہ پر صرف بحث ہوئی تھی کہ کیا سیاسی قیدیوں کی صورت حال کا جائزہ لیا جانا چاہئے۔ اس معاملہ پر کوئی اتفاق رائے نہ بننے کی وجہ سے اسے منشور میں شامل نہیں کیا گیا‘۔وزارت داخلہ نے بھی عالم کی رہائی کو لے کر اعتراض جتایا ہے اور اس بارے میں جموں وکشمیر حکومت سے ایک تفصیلی رپورٹ طلب کی ہے۔ وزارت کے ایک اہلکار نے بتایاکہ ،وزارت داخلہ حالیہ اقدامات اور پی ڈی پی کی طرف سے آ رہے بیانات سے خوش نہیں ہے‘۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ خطرناک ثابت ہوگا اور اس سے وادی میں دہشت گردی پھر سے سر اٹھا سکتی ہے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment