Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 01:14 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

اوکھلا میں’’گریس ویلنیس‘‘ ڈائیگونسٹک سینٹر کا افتتاح

 

پروفیسر طلعت احمد اور امانت اللہ خان نے کی شرکت*جامعہ کے وائس چانسلر نے کیا ہرممکن کا تعاون کااعلان*سینٹر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر مدحت حسین اور جوائنٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر ابھشیک جین نے کیامناسب قیمت پر بہتر علاج کا وعدہ*10خاندانوں کی کفالت کا فیصلہ
نثاراحمدخان

نئی دہلی، 7مارچ(ایس ٹی بیورو) مسلم اکثریتی حلقہ جامعہ نگر میں گرچہ سرکاری اسپتالوں کی ضرورت شدت سے محسوس کی جارہی ہو، مگر پرائیویٹ سینٹروں کی تعداد میں اضافہ ہوتاجارہا ہے۔ علاقے میں جب کسی اسپتال اور ڈائیگونسٹک سینٹر کا افتتاح ہوتا ہے توعوام میں تھوڑی راحت اور خوشی دیکھنے کو ملتی ہے کہ شاید اب عام لوگوں کو آسان اور سستا علاج فراہم ہوگا۔
تاہم اکثروبیشتر موقعوں پر عوام کی یہ امیدیں ادھوری رہ جاتی ہیں،مگر اس ضمن میں آج گریس ویلنیس نامی ایک اور ڈائیگونسٹک سینٹر اینڈ میڈیکیئر سینٹر کا افتتاح عمل میں آیا، جس سے عوام میں جوش وخروش کو دیکھنے کے بعد ایسا محسوس ہورہا تھا کہ شاید اب عوام کو بہت بڑی راحت ملنے والی ہے۔ اس بات کا اشارہ گریس ویلنیس کے ڈائریکٹر ڈاکٹر مدحت حسین اور جوائنٹ ڈائریکٹر ڈاکٹر ابھشیک جین نے بھی دیا کہ سینٹر نے ابھی 10فیملی کی کفالت کرنے کافیصلہ کیاہے اور آگے بھی اس فہرست کو آگے بڑھائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ اس ڈائیگونسٹک سینٹر کے قیام کا مقصد صرف تجارت کرنا نہیں ہے بلکہ اس کے ذریعہ غریب اور کمزور لوگوں کو بہتر طبی سہولیات فراہم کی جاسکے۔ڈاکٹر مدحت حسین اور ڈاکٹر ابھشیک جین نے یہ بھی کہاکہ ہم عوام کو بہتر سہولیات فراہم کرائیں گے کیونکہ اوکھلا میں طبی سہولیات فراہم کرنا سخت ضرورت ہے۔
اوکھلا ہیڈ واقع ایم سی ڈی اسکول سے متصل میدانتا کے تعاون سے گریس ویلنیس سینٹر اینڈ میڈیکیئر سینٹر کا افتتاح آج جامعہ ملیہ اسلامیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد، مولانا محمد ولی رحمانی اور میدانتا ہاسپٹل کے سینئر رکن ڈاکٹر منیش بنسل کے ہاتھوں عمل میں آیا۔ اس موقع پر اوکھلا کے ایم ایل اے امانت اللہ خان بھی موجود تھے۔ جامعہ ملیہ اسلامیہ کے وائس چانسلر پروفیسر طلعت احمد نے کہاکہ یہ کام اوکھلا میں بہت پہلے ہونا چاہئے تھا، مگر تاخیر سے ہی سہی، لیکن اب یہاں ڈائیگونسٹک سینٹر کا افتتاح کیاجارہا ہے، جس سے لوگوں کو امید ہے کہ کم قیمت پر اور مستحقین اور غریبوں کا لحاظ رکھتے ہوئے سہولیات فراہم کرائی جائیں گی۔ پروفیسر طلعت احمد نے کہاکہ بچوں کیلئے ایجوکیشن اور صحت دونوں بہت ضروری ہیں، چنانچہ جامعہ ملیہ اسلامیہ سے جو بھی ممکن ہوسکے گا یونیورسٹی تعاون کرے گی۔
واضح رہے کہ اس سینٹر کو میدانتا ہاسپٹل کا تعاون بھی حاصل رہے گا، جس کا ڈاکٹر منیش بنسل نے وعدہ بھی کیاہے۔ ڈاکٹر بنسل نے کہاکہ یہاں کم قیمت پر بہترسروسیز فراہم کرنے کی ہماری کوشش ہوگی اور جو بھی سہولیات میدانتا میں مہیا ہیں، وہ سب اوکھلا کے لوگوں کو مہیا کرائی جائیں گی تاکہ یہاں کے لوگوں کو علاقے میں ہی علاج کی سہولیات فراہم ہوسکے۔ بشارت حسین نے سینٹر کے ذمہ داران کو مشورہ دیاکہ اسے صرف ذریعہ معاش نہ بنایاجائے بلکہ عوام کی فلاح وبہبودکا ایک ذریعہ بنایاجائے، تو زیادہ بہتر ہوگا۔ اس موقع پر ڈاکٹر مارتی گوئل اور پروفیسر مجتبیٰ وغیرہ نے بھی اپنے خیالات کااظہار کیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر ریحان، ڈاکٹر مد ثر، ڈاکٹر تنیجا، پرویز عالم، شعیب خان اور بڑی تعداد میں مقامی لوگ بھی موجود تھے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment