Today: Saturday, November, 17, 2018 Last Update: 06:06 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

حریت کانفرنس نے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان مذاکراتی عمل کی بحالی کا خیر مقدم کیا

 

سری نگر، 4 مارچ (یو ا ین آئی ) میر واعظ مولوی عمر فاروق کی قیادت والی حریت کانفرنس نے ہندوستان اور پاکستان کے درمیان معطل شدہ مذاکراتی عمل کی بحالی کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ حریت کانفرنس دونوں مما لک کے خارجہ سیکریٹریوں کے درمیان ملاقات کو ایک مثبت پیش رفت کے طور پر دیکھتی ہے ۔یہاں جاری ایک بیان کے مطابق کل جماعتی حریت کانفرنس کی ایگزیکیٹو کونسل کا ایک غیر معمولی اجلاس بدھ کے روز حریت چیرمین میرواعظ ڈاکٹر مولوی محمد عمر فاروق کی صدارت میں منعقد ہوا۔اجلاس میں رواں سیاسی صورتحال کے علاوہ ہندوستان اور پاکستان کے خارجہ سیکریٹری سطح کے مذاکرات پر تفصیل کے ساتھ تبادلہ خیال ہوا۔اجلاس میں بتایا گیا کہ حریت کانفرنس نے ہمیشہ ہر اس قدم کا خیر مقدم کیا ہے جس کا مقصد دونوں ممالک کے درمیان دوستانہ تعلقات اور اعتماد سازی کے ماحول کو فروغ دینا ہو ، کیونکہ ایسا مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے نا گزیر ہے ۔ تاہم اجلاس میں اس امر پر زور دیا گیا کہ وقت آگیا ہے کہ مزید وقت ضائع کئے بغیر اور کشمیری عوام کو نظر انداز نہ کرتے ہوئے ایک بامعنی مذاکراتی عمل کا آغاز کیا جا نا چاہئے اور حکومت ہندوستان ، حکومت پاکستان و جموں کشمیر کے عوام اس مسئلہ کے دائمی حل کیلئے سنجیدہ کوششوں کا اغاز کریں۔بیان کے مطابق اجلاس میں ماضی کے تلخ تجربات کو مد نظر رکھ کر اس بات پر زور دیا گیا کہ مسئلہ کے حل کیلئے محض افسر شاہی سطح کی ملاقاتیں اس مسئلہ کے حل کیلئے کبھی بھی کافی ثابت نہیں ہونگی جو بنیادی طور پر ایک سیاسی مسئلہ ہے اور جس کے حل کیلئے سیاسی قیادت کی سطح پر سیاسی جرأت مندی اور قوت فیصلہ سے عبارت اقدامات کی ضرورت ہے ۔اسی سے جنوبی ایشیا میں غیر یقینی صورتحال کا خاتمہ کیا جا سکتا ہے ۔ اجلاس میں کہا گیا کہ دونوں ممالک کے درمیان کئی بار مذاکراتی عمل تو شروع ہوا لیکن ہر بار تعطل کا شکار ہو تا رہا ہے اور اس گومگو کی کیفیت کی وجہ سے کشمیری عوام کو مصائب اور غیر یقینی صورتحال کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ اس امر کو مدنظر رکھ کر اجلاس میں کہا گیا ہے کہ آہستہ روی اور ماضی کے روایتی طریقہ ہائے کار سے عبارت عمل کو ترک کر کے ہندوستان پاکستان اور جموں کشمیر کے عوام غیر معمولی سیاسی جرأتْ مندی اور دور اندیشی کا مظاہرہ کریں تاکہ اس مسئلہ کے قابل قبول حل کیلئے راستے تلاش کئے جا سکیں۔ آگے بڑھنے کا عزم ظاہر کرتے ہوئے اجلاس میں ہندوستان اورپاکستان کے وزرائے اعظم سے اپیل کی گئی کہ وہ مسئلہ کشمیر کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کیلئے جموں کشمیر کی مسلمہ قیادت کو اعتماد میں لے کر سنجیدگی کا مظاہرہ کریں تاکہ کشمیری عوام کی خواہشات اور امنگوں کا احترام کرتے ہوئے اس مسئلہ کا ایک ایسا حل تلاش کیا جائے جو تمام فریقین کو قابل قبول ہو ۔
بیان کے مطابق اجلاس میں ایگزیکٹیو کونسل کے اراکین پروفیسر عبدالغنی بٹ، مولانا محمد عباس انصاری، بلال غنی لون، محمد مصدق عادل اور مختار احمد وازہ نے شرکت کی۔ جب کہ حریت کانفرنس کے پولیٹکل ایڈوائزر ایڈوکیٹ عبدالمجید بانڈے بھی میٹنگ میں موجود تھے۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment