Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 08:53 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

حکومت لوگوں کو بدعنوانی سے پاک انتظامیہ دینے کیلئے پابند :وزیر اعلی

 

رانچی،26( ایجنسیاں ) وزیر اعلی رگھوورداس نے آج پروجیکٹ بلڈنگ واقع اپنے جلسہ گاہ میں ریاست کے ڈویزنل کمشنروں کی نشست کو خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ریاست کی ترقی کے تئیں مکمل عزم کے ساتھ مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ ریاست کی غریب عوام ، درج فہرست قبائلی ،درج فہرست ،ذات ،پسماندہ طبقہ ،اقلیت سبھوں کی مدد کے لئے کام کرنے کو سوچیں اور ایک دوسرے کے ساتھ اپنی سوچ میں حصہ دار بنائیں۔ ریاست کی دو کروڑ 45لاکھ دیہی عوام کے مفاد کو دھیان میں رکھ کر کام کرنا ہے۔ انہیں ریاستی حکومت کی جانب سے دی جا رہی ہیں ۔ سہولیات اور کدمات برووقت فراہم کرائیں ۔ وزیر اعلی رگھوورداس کہاکہ انتظامیہ میں کمشنر کا اہم رول مقام ہوتا ہے۔ ڈویزن کو ن سی سکریٹریٹ مانا جاتا ہے۔ کمشنروں کو مکمل اختیارات حاصل ہیں ۔ ان کا استعمال کریں۔ جنوبی چھوٹا ناگپور کے ڈویزنل کمشنرکے کے کھنڈیل والی رہنمائی میں تمام کمشنرموجودہ انتظامیہ مستحکم انتظاامیہ محصول اور مالی اختیارات کا تجزیہ کریں ۔ اور مستحکم انتظامیہ کے لئے اگر ضروری ہو تو مشوروں سے مطلع کریں حکومت اس پر جلد کارروائی کرے گی ۔ ہمیں مل کر ضروری ترمیم کے ساتھ کچھ نیا کرنا ہے۔ اور ڈویزنل دفتر کو مزید مستحکم ، اختیاری اور جوابدہ بنانا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ضلع سطح پر بھی ڈی سی اور ڈی ڈی سی کے کاموں کی بھی الگ ۔الگ وضاحت کی جائے۔ موصوف نے کہاکہ ریاستی حکومت عام لوگوں کو بدعنوانی سے پاک شفاف انتظامیہ دینے کیلئے پابند عہد ہے۔ بدعنوانی کسی بھی افسر، ملازم ، انجینئر یا دیگر کے خلاف اطلاع متعلقہ محکمہ اور وزیر اعلی سکریریٹ کو دی جائے ۔ اطلاع موصول ہونے پر 24گھنٹہ کے اندر کارروائی کو قابل یقینی بنانے کی ہدایت دی ۔ کارروائی نہیں ہونے کی وجہ سے انتظامیہ کا معیار گرتا ہے۔ قصوروار وں کا حوصلہ بڑھتا اور لوگوں میں انتظامیہ کے تئیں بے اعتماد ی پیدا ہوتی ہے۔ انتظامیہ میں اطلاع تکنیک کا جتنازیادہ استعمال ہوگا ۔ بدعنوانی سے پاک انتظامیہ دینا آسانی ہوگا۔ اے سی اور ڈی سی بل کے موضوع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلی نے کہاکہ ریاست کی تشکیل کے بعد سے اب تک اے سی او رڈی سی بل کی موجودحالت کو واضح کرنے کے لئے سال وار فہرست تیار کی جائے۔ اس میں ایم پی اور ایم ایل اے فنڈ کے تحت کام کے لئے نکالی گئی رقم بھی شامل ہو۔ فہرست کی کاپی وزیر اعلی سکریٹریٹ کو بھی دی جائے۔ نکالی گئی رقم ایڈوانس رقم کو جلد ختم کرنے کے لئے ضروری کاروائی یقینی بنائیں ۔ مختلف محکوں کو بھی اس متعلق مطلع کریں ، رقم نکالنے کے باوجود کام نہیں کرنے والے قصورواروں کے خلاف کارروائی کی جائے۔ واؤچر سسٹم بدلنے کی ضرورت پر زور دینے ہوئے کہاکہ چھوٹے چھوٹے کاموں کا واؤچر اکٹھا کرنا ممکن نہیں ہو پاتا ہے۔ ایسی حالت میں میزرمنٹ اور یو ٹیلیٹی سرٹیفکٹ کی بنیاد پر ادائیگی کی جائیگاگی ۔ 

 

 

...


Advertisment

Advertisment