Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 04:54 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

کجریوال نے نبھا یا اپنا سب سے بڑا وعدہ


بجلی میں 50فیصد کی چھوٹ جبکہ 20ہزار لیٹرپانی مفت دینے کا اعلان، 400یونٹ سے زیادہ بجلی استعمال کرنے پر دینا ہوگا پورا بل
نثاراحمدخان
نئی دہلی، 25فروری (ایس ٹی بیورو) وزیراعلیٰ اروند کجریوال نے آج اپنا سب سے بڑا وعدہ نبھاتے ہوئے پانی مفت کرنے اور بجلی کی قیمت نصف کرنے کا اعلان کیاہے۔ کابینہ کی میٹنگ کے بعد نائب وزیراعلیٰ منیش سسودیا نے پریس کانفرنس میں کہاکہ عام آدمی پارٹی نے عوام سے جو وعدہ کیاتھا، اسے ہم پورا کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بجلی اور پانی کا مسئلہ عوام کیلئے انتہائی اہم تھا، اس سے لوگ بہت پریشان تھے، مگر ہم جو وعد ہ کرتے ہیں اسے پورا کرتے ہیں اور اسی لئے عوام ہمیں پسند کرتی ہے۔ منیش سسودیا نے کہاکہ 200یونٹ تک بجلی استعمال کرنے والوں کو 2روپئے فی یونٹ ادائیگی کرنی ہوگی جبکہ 200سے 400یونٹ تک بجلی کی قیمت 2.98روپئے فی یونٹ کے حساب سے دینا ہوگا۔ اس کے علاوہ پانی بھی 20ہزار لیٹر تک ہرماہ مفت ہو گا۔ انہوں نے بتایا کہ یہ سبسڈی ایک مارچ سے نافذ کی جائے گی۔ انہوں نے بتایاکہ 400یونٹ سے زیادہ بجلی خرچ کرنے پر مکمل بل کی ادائیگی کرنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ میری دہلی والوں سے اپیل ہے کہ کفایت سے بجلی خرچ کریں تاکہ ان کا بجلی کا بل نصف ہو سکے۔ منیش سسودیا نے کہاکہ بجلی کے نصف ہونے کا فائدہ 36 لاکھ6ہزار 428 خاندانوں کے لوگ اٹھائیں گے،جو دہلی کے آبادی کا 90 فیصد ہے۔ ایک مارچ سے31مارچ تک کے دام آدھے کرنے پر 70کروڑ روپئے کا خرچ آئے گا۔ سسودیا نے بتایا کہ یہ سبسڈی سی اے جی آڈٹ مکمل ہونے تک جاری رہے گی۔ بجلی بل نصف کرنے پر حکومت کو 1427کروڑ روپئے مختص کرنا ہوگا۔ پانی مفت کرنے کا فائدہ تقریباً 18 لاکھ خاندانوں کو ملے گا۔اس کیلئے حکومت کو 20 کروڑ ماہانہ اضافی خرچ کرنے ہوں گے۔
اس سے قبل وزیر اعلی اروند کجریوال نے بدھ کو سی اے جی (کیگ) ششی کانت شرما سے ملا۔ دہلی حکومت نے سی اے جی سے دارالحکومت میں بجلی کمپنیوں کا آڈٹ کرنے کو کہا ہے۔ وزیر توانائی ستیندر جین نے بتایا کہ دہلی حکومت نے اس کیلئے کوئی وقت کی حد طے نہیں کی ہے۔ جین کے مطابق سی اے جی کو کسی بھی وقت کسی بھی بجلی کمپنی کا آڈٹ کر سکتے ہیں۔ دہلی حکومت چاہتی ہے کہ وہ ایسی بجلی تقسیم کمپنیوں سے بجلی خریدے جو اسے کم شرح پر بجلی دیں۔ تاہم، بجلی کمپنیوں اور حکومت کے درمیان ہوئے معاہدہ کے سبب فی الحال ایسا کر پانا ممکن نہیں ہے۔دہلی میں ابھی لوگوں کو ایک سے 200یونٹ تک کیلئے 4روپئے اور200یونٹ سے 400یونٹ کیلئے5.95 روپئے فی یونٹ ادا کرنا ہوتاہے، لیکن عام آدمی پارٹی نے وعدہ کیا ہے کہ وہ400 یونٹ تک بجلی استعمال کرنے والوں کو 50فیصد کی سبسڈی دے گی۔ ایسا کرنے کیلئے حکومت کو سستی بجلی دینے والے ڈسٹری بیوٹر کی تلاش ہے۔حالانکہ وزیراعلیٰ اروند کجریوال نے منگل کو اسمبلی اجلاس میں اپنی تقریر کے دوران کہا تھاکہ ان کی حکومت بجلی پر ایک وہائٹ پیپرلائے گی، تاکہ عوام کو موجودہ حالات کا پتہ چلے۔ انہوں نے کہا کہ وہائٹ پیپر کے ذریعہ حکومت عوام کو بجلی کی صورتحال پر جانکاری دیناچاہتی ہے اور بتانا چاہتی ہے کہ اس نے کہاں سے کام شروع کیا۔ لوگ 5سال بعد وہائٹ پیپر دیکھ کر ’آپ‘ سرکارکی ترقی کا موازنہ کر سکتے ہیں۔

 

...


Advertisment

Advertisment