Today: Friday, September, 21, 2018 Last Update: 10:42 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

ایماندار پربھو آج پیش کریں گے ریل کا نیا خاکہ


پورے ملک کو اچھے ریل بجٹ کا انتظار ، کیا اس بارکچھ مل پائے گا یوپی کو ، بڑا سوال ، بہار پر خصوصی نوازش کا امکان
نئی دہلی،25فروری(یو این آئی)نئی توقعات اور امیدوں کے ساتھ ریلوے کی سہولیات میں اضافہ نیز ریلوے اسٹیشنوں کو بہتر بنانے کے درمیان ریلوے کے مرکزی وزیر سریش پربھاکر پربھو کل ریلوے کا سالانہ بجٹ پیش کرنے والے ہیں۔مسٹرپر بھو جو اپنی شخصیت کو بھی اس بجٹ کے ذریعہ نکھارنا چاہتے ہیں اور بہترین انداز میں کام کرنے والے کی شناخت بنانے کی کوششوں میں سرگرداں ہیں۔اس بجٹ کے ذریعہ وہ قلیل مدتی و طویل مدتی منصوبوں وخاکو ں کو اچھے اسلوب میں پیش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔مسٹر پربھو اپنے بجٹ میں ریلوے کی جدید کاری اور اس میں وسعت لانے کی بھی کوشش کر رہے ہیں جس کے ذریعہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے خوابوں کو بھی شرمندہ تعبیر کرنا چاہتے ہیں ۔واضح رہے کہ مسٹر مودی ملک میں ہائی اسپیڈ ٹرین چلانا چاہتے ہیں اور اس کے لئے وہ پوری دنیا کے سرمایہ کاروں کو متوجہ کر نے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔مسٹر مودی اس پروجکٹ کو اپنا ڈریم پروجکٹ کہتے ہیں۔ذرائع کی مانیں تو اس مرتبہ کے بجٹ میں کسی نئے ٹرین سے متعلق کوئی بڑا اعلان نہیں کیا جائے گا۔جن سادھارن ایکسپریس ٹرینوں کی تعداد میں اضافے کی توقع کی جا رہی ہے اور اس کے ساتھ ہی کئی بلا ریزرو ٹرینوں کے بھی چلائے جانے کا اعلان کیا جا سکتا ہے ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ملک کے مشرقی حصے میں رہنے والوں کو لئے اس بجٹ میں کئی فائدے کی چیزیں ہو سکتی ہیں اور حکومت لاکھوں تارکین وطن کو مستفید کرنے کی کوششیں کر رہی ہے ۔سرکاری ذرائع نے آج یہاں بتایا کہ ریلوے کے خزانہ میں بھی اضافہ کرنے کی بھی کوشش کی جا رہی ہے ۔ مسٹر پربھو ریلوے مسافرین پر اضافی بوجھ نہیں لادنا چاہتے ہیں اور امکان ہے کہ ریلوے کرایے میں کسی قسم کا اضافہ نہیں کیا جائے گا۔واضح رہے کہ ریلوے کو اصل منافع مال بھاڑے کے ذریعہ ہوتا ہے اوریہ 65فیصد تک ہوتا ہے اور ایسی امید کی جا رہی ہے کہ مال کرایے میں کچھ اضافہ کیا جائے ۔ ریلوے سڑک کے راستے کئے جانے والے تجارت پر بھی نظر رکھ رہا ہے اور اس سلسلے میں بھی مال بھاڑے میں ترمیم کی جانے کی توقع ہے ۔امید کی جارہی ہے کہ اس مرتبہ ریلوے کی سرمایہ کاری میں بھی اضافہ کیا جا ئے گا اور کئی بہتر سہولیات بھی مسافروں کو حاصل ہوں گی۔کہا جا رہا ہے کہ صفائی،کیٹرنگ اور کچھ نئی سہولیات میں بھی اضافہ کیا جائے گا جس میں نمایاں طور سے ٹرینوں کے اندر انٹرنیٹ کا استعمال شامل ہے ۔سرکاری ذرائع سے یہ بھی اطلاعات ملی ہیں کہ ریلوے کے وزیر چند نئے پروجکٹوں کے لئے راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے دروازے بھی کھول سکتے ہیں جس میں بنیادی طور سے ٹریک کی تجدید کاری، سگنلوں کی بہتری اور یگر چیزیں شامل ہیں۔این ڈی اے کی نئی حکومت شمال مشرقی ریاستوں پر بھی خاص نظر رکھنے والی ہے اور اس کے لئے بھی وہ چند نئے پروجکٹ ریلوے میں شامل کر سکتی ہے ۔اس علاقے کو ملک کے دیگر علاقوں سے جوڑنے اور ریل نیٹ ورک میں اس کی بڑی حصہ داری بھی ہو نے کے امکانات ہیں۔سرمایہ کاری میں نمایاں اضافے کے واضح امکانات کے ساتھ نقل و حمل کے ایک اہم شعبے میں کل نئی توقعات اور امیدوں کے درمیان ریلوے کے مرکزی وزیر سریش پربھاکر پربھو کل اپناپہلا ریل بجٹ پیش کرنے جارہے ہیں جس میں مسافروں کی سہولیات میں اضافہ نیز ریلوے اسٹیشنوں کو بہتر بنانے کے اقدامات کو بھی خاطر خواہ اہمیت دی جائے گی۔ وزیر اعظم نریندر مودی جو ملک میں ہائی اسپیڈ ٹرین چلانا چاہتے ہیں اپنی اقتصادی ترقی رخی سوچ کو عمل میں لانے کے لئے ریلوے میں موجودہ سرمایہ کاری کا دائرہ 25 فیصد سے زیادہ وسیع کر سکتے ہیں۔ چونکہ ہائی اسپیڈ ٹرین ان کے لئے ایک ڈریم پروجکٹ ہے اس لئے وہ پوری دنیا کے سرمایہ کاروں کو متوجہ کر نے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ماضی میں چین نے اسی راستے سے اپنی اقتصادی ترقی کو مہمیز لگائی تھی۔سرکاری ذرائع سے یہ بھی اطلاعات ملی ہیں کہ ریلوے کے وزیر چند نئے پروجکٹوں کے لئے راست غیر ملکی سرمایہ کاری کے دروازے بھی کھول سکتے ہیں جس میں بنیادی طور سے ٹریک کی تجدید کاری، سگنلوں کی بہتری اور یگر چیزیں شامل ہیں۔مسٹرپر بھو جواس محاذ پر ریلوے کا ایک موثر کردار سامنے لا نا چاہیں گے جو انہیں اپنی شخصیت کو بھی نکھارنے کا موقع دے گا۔اس بجٹ کے ذریعہ وہ قلیل مدتی و طویل مدتی منصوبوں وخاکو ں کو اچھے اسلوب میں پیش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔مسٹر پربھو اپنے بجٹ میں ریلوے کی جدید کاری اور اس میں وسعت لانے کی بھی کوشش کر رہے ہیں جس کے ذریعہ وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے خوابوں کو بھی شرمندہ تعبیر کرنا چاہتے ہیں ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ کے بجٹ میں کسی نئے ٹرین سے متعلق کوئی بڑا اعلان متوقع نہیں۔جن عام ایکسپریس ٹرینوں کی تعداد میں اضافے کی توقع کی جا رہی ہے اور اس کے ساتھ ہی کئی غیر ریزرو ٹرینوں کے بھی چلائے جانے کا اعلان کیا جا سکتا ہے ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ملک کے مشرقی حصے میں رہنے والوں کو اس بجٹ میں کئی فائدے ہو سکتے ہیں ۔ مسٹر پربھو ریلوے مسافرین پر اضافی بوجھ نہیں لادنا چاہتے ہیں اور امکان ہے کہ ریلوے کرایے میں کسی قسم کا اضافہ نہیں کیا جائے گاالبتہ مال بھاڑے میں کسی حد تک اضافہ ہو سکتا ہے ۔واضح رہے کہ ریلوے کو اصل منافع مال بھاڑے کے ذریعہ ہوتا ہے اوریہ منافع 65فیصد تک ہوتا ہے ۔ ریلوے سڑک کے راستے کئے جانے والے تجارت پر بھی نظر رکھ رہا ہے اور اس سلسلے میں بھی مال بھاڑے میں ترمیم کی جانے کی توقع ہے ۔امید کی جارہی ہے کہ اس مرتبہ ریلوے کی سرمایہ کاری میں اضافے کے ساتھ کئی بہتر سہولیات بھی مسافروں کو حاصل ہوں گی۔کہا جا رہا ہے کہ صفائی،کیٹرنگ اور کچھ نئی سہولیات میں بھی اضافہ کیا جائے گا جس میں نمایاں طور سے ٹرینوں کے اندر انٹرنیٹ کا استعمال شامل ہے ۔این ڈی اے کی نئی حکومت شمال مشرقی ریاستوں پر بھی خاص نظر رکھنے والی ہے اور اس کے لئے بھی وہ چند نئے پروجکٹ ریلوے میں شامل کر سکتی ہے ۔اس علاقے کو ملک کے دیگر علاقوں سے جوڑنے اور ریل نیٹ ورک میں اس کی بڑی حصہ داری بھی ہو نے کے امکانات ہیں۔یہاں سے سابقہ سیریز دیکھیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment