Today: Wednesday, November, 21, 2018 Last Update: 10:09 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

کشمیر میں تازہ برفباری اور موسلادھار بارش، سردی میں شدت

 

موسلادھار بارش سے معمولاتِ زندگی درہم برہم، بیشتر علاقوں میں بجلی گُل

سری نگر، 25 فروری (یو ا ین آئی ) وادی کشمیر میں تازہ برفباری اور موسلادھار بارشوں کے نتیجے میں سردی کی لہر میں مزید شدت پیدا ہوگئی ہے جہاں محکمہ موسمیات نے اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران بھاری بارش اور برفباری کی وارننگ جاری کردی ہے ۔وادی کشمیر کی شہرہ آفاق سیاحتی مقام گلمرگ اور دوسرے بالائی علاقوں میں بدھ کی صبح سے درمیانہ سے بھاری درجے کی برفباری جبکہ میدانی علاقوں بشمول سری نگر میں وقفہ وقفہ سے موسلادھار بارش اور ہلکی برفباری کا سلسلہ جاری ہے ۔ رات بھر وقفہ وقفہ سے بارش کا سلسلہ جاری رہنے کے بعد بدھ کی صبح سری نگر میں ہلکی برفباری ہوئی۔ تاہم برفباری کا سلسلہ جلد رک گیا اور پھر سے بارشوں کا سلسلہ شروع ہوگیا جو تا دم تحریر جاری تھا۔ محکمہ موسمیات کے ایک ترجمان نے بتایا کہ سری نگر میں صبح آٹھ بجے تک 45.4 ملی میٹر بارش اور برفباری ریکارڈ کی گئی۔گلمرگ سے ایک ہوٹل مالک نے یو این آئی کو فون پر بتایا کہ برفانی ڈھلانوں پر تازہ ایک فٹ برف جمع ہوئی ہے ۔ انہوں نے برفباری کو سیاحت کے شعبے کیلئے اچھا قرار دیتے ہوئے کہا کہ گلمرگ میں جمع ہوئی برف اپریل آخر تک موجود رہے گی۔انہوں نے بتایا کہ رواں سال کے جنوری تک برفباری نہ ہونے کی وجہ سے کشمیر کی سیاحتی صنعت کو زبردست دھچکا لگا کیونکہ اُس دوران ملک اور بیرون ملک سے بہت ہی کم سیاح کشمیر کی سیر کو آئے ۔ سری نگر کے سیول لائنز کے بیشتر علاقوں میں بدھ کے روز بجلی کی سپلائی ٹھپ رہنے کی وجہ سے میڈیا ، سرکاری اور نجی دفاتر کے ساتھ ساتھ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ (بی ایس این ایل) کے معمول کے کام کاج میں خلل پڑا۔صبح نو بجے سے قبل ہی سیول لائنز کے درجنوں علاقوں بشمول بربرشاہ، ریڈکراس روڑ، کوٹھی باغ، ایکسچینج روڑ اور حاجی مسجد روڑ میں اچانک بجلی سپلائی گل ہوگئی۔ بجلی کی عدم دستیابی کی وجہ سے بی ایس این ایل، یو این آئی، اے ایف پی، ڈیلی جاگرن، جوائنٹ ڈائریکٹر انفارمیشن، گورنمنٹ پریس، مزدور کوآپریٹیوپریس اور بینکوں، نجی اور سرکاری دفاتر کے معمول کے کام کاج میں خلل پڑ ا۔ بی ایس این ایل کا مین ٹیلی فون ایکسچینج اور براڈبینڈ بھی متاثر رہا۔ تاہم بی ایس این ایل اور دیگر دفاتر نے معمول کی سرگرمیوں کو انجام دینے کیلئے پاور جنریٹرس استعمال میں لائے ۔ پاور ڈیولپمنٹ ڈیپارٹمنٹ (پی ڈی ڈی) کے افسران نے بتایا کہ ٹرانسمشن لائن میں فنی خرابی پیدا ہوگئی ہے اوربجلی سپلائی بحال کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment