Today: Tuesday, November, 13, 2018 Last Update: 09:46 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

سوائن فلو سے نمٹنے کیلئے وادی کشمیر میں الرٹ جاری

 

سری نگر، 19 فروری (یو ا ین آئی ) وادی کشمیر میں سوائن فلو کی وبا پھوٹ پڑنے کے بعد کشمیر انتظامیہ نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ خوف زدہ نہ ہوں۔ سرکاری ذرائع کے مطابق انتظامیہ نے اس چیلنج سے نمٹنے کیلئے کئی اقدامات کا اعلان کیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سوائن فلو سے متاثر مریضوں کے علاج ومعالجہ کیلئے سری نگر میں واقع امراض چھاتی کے اسپتال میں خصوصی وارڈ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ وادی کشمیر میں سوائن فلو نے اب تک دو افرادکی جانیں لیں جبکہ 70دیگر افراد کو اس بیماری میں مبتلا پایا گیا ہے ۔ اگرچہ انتظامیہ نے اس چیلنج سے نمٹنے کیلئے موثر اور عملی اقدامات اٹھانے کا دعویٰ کیا ہے ۔ تاہم بعض رپورٹوں کے مطابق وادی کشمیر کے کسی بھی ضلع اسپتال میں سوائن فلو کی تشخیص کیلئے مشینری دستیاب نہیں ہے ۔ جبکہ حقیقت یہ ہے کہ شیر کشمیر انسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسز (سکمز) جہاں سوائن فلو سے متاثر مریضوں کا علاج کیا جارہا ہے ، میں بھی اس بیماری کا پتہ لگانے والی مشینری دستیاب نہیں ہے ۔ کیونکہ سکمز سے سوائن فلو کے مشتبہ مریضوں کے نمونے تشخیص کیلئے نئی دہلی روانہ کئے جارہے ہیں۔مین اسٹریم سیاسی جماعتوں اور علیحدگی پسند جماعتوں کے علاوہ سیول سوسائٹی نے وادی کشمیر میں سوائن فلو کی وبا پھوٹ پڑنے پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے ۔ سکمز ڈائریکٹر ڈاکٹر شوکت زرگر نے کل پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وادی کشمیر میں تاحال دو مریضوں کی سوائن فلو کی وجہ سے موت واقع ہوئی جبکہ 70 دیگر کو متاثر پایا گیا۔تاہم انہوں نے بتایا کہ سوائن فلو سے متاثر پائے گئے مریضوں میں سے بیشتر علاج کے بعد روبہ صحت ہوگئے ہیں۔ دوسری جانب سوائن فلو سے نمٹنے کیلئے وادی کشمیر میں ضلعی انتظامیہ نے اقدامات اٹھانا شروع کردیے ہیں۔ ایک سرکاری ترجمان نے بتایا کہ وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام میں سوائن فلو سے نمٹنے کیلئے پیشگی اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ ا س سلسلے میں ضلع ترقیاتی کمشنر بڈگام کی صدارت میں ایک ہنگامی میٹنگ طلب کی گئی جس میں محکمہ صحت سے وابستہ افسران وعملہ جن میں چیف میڈیکل افسر بڈگام اور سپر انٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ ہسپتال کے علاوہ سبھی بلاک میڈیکل افسران نے شرکت کی۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ محکمہ صحت بڈگام کے تمام چھوٹے بڑے طبی اداروں میں تعینات ڈاکٹروں،متعلقہ عملہ کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ وہ طبی اداروں میں سوائن فلو کی تشخیص یقینی بنائیں۔انہوں نے کہا کہ ضلع میں کسی بھی علاقے سے اس قسم کی کوئی اطلاع نہیں ملی ہے ۔ البتہ وادی کے دوسرے حصوں کے ساتھ ساتھ یہاں بھی احتیاط کے تحت اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہا اس وبائی وبیماری سے نمٹنے کے لئے چیف میڈیکل افسر کے تحت ایک کنٹرول روم قائم کیا گیا۔ ترجمان نے بتایا کہ سوائن فلو کے پھیلنے کے اندیشہ کے پیش نظر ضلع ترقیاتی کمشنر کپوارہ نے بھی محکمہ صحت،تعلیم،سماجی بہبود اور آئی سی ڈی ایس سے وابستہ افسروں کی ایک مشترکہ میٹنگ طلب کرکے ضلع میں ایچ ون این ون سے بچاؤ کے لئے احتیاطی تدابیر پر غوروخوض کیا ۔ چیف میڈیکل افسر کپوارہ نے کہا کہ ضلع میں ابھی تک ایسا کوئی معاملہ سامنے نہیںآیا تاہم احتیاطی تدابیر کے تحت نتنوسہ میں قائم این ٹی پی ایچ سی کوڈاکٹر،نیم طبی عملہ اور دیگر سازوسامان سمیت تعینات کیا گیا ہے ۔سوائن فلو کے مرض میں مبتلا بیماروں کے لئے الگ وارڈ کابھی انتظام کیا گیا ہے ۔انہوں نے صفائی ستھرائی کا خاص خیال رکھنے کی لوگوں کو تلقین کی اور بخار،سردی،زکام،نزلہ اورکمزوری کی صورت میں ڈاکٹر سے صلاح مشورہ کرنے کا مشورہ دیا۔ضلع ترقیاتی کمشنرکپواڑہ نے بیماری کی صورت میں محکمہ تعلیم کو اس بیماری میں مبتلابچوں کے لئے الگ کلاس روم قائم کرنے کی ہدایت دی اور بچوں میں بیماری سے متعلق بیداری کیمپوں کا انعقاد کرانے کی بھی ہدایت دی۔انہوں نے سکولوں میں صحت وصفائی کو یقینی بنانے کی بھی متعلقہ حکام کو ہدایت دی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment