Today: Monday, September, 24, 2018 Last Update: 10:44 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

ویاپم کھوٹالے کیلئے شیوراج سنگھ چوہان ملزم


کانگریس نے بی جے پی کیخلاف کھولا محاذ ، استعفیٰ کا مطالبہ ہوا تیز، دگ وجے سنگھ نے کہا کہ’شیوراج کی جگہ پر ڈالا گیا ہے اوما بھارتی کا نام، کانگریس کے الزامات کو بی جے پی نے کیا خارج
محمداحمد
نئی دہلی،17فروری ( ایس ٹی بیورو) لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات میں مدھیہ پردیش میں ملی زبردست شکست سے پریشان کانگریس ایک بار پھر حکومت پر حملہ کے ذریعہ اپنا وجود تلاش کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔آج کانگریس کے تین بڑے رہنماؤں نے ایک ساتھ وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کو ویا پم گھوٹالے میں گھیرنے کی کوشش کی، کانگریس نے الزام لگایا کہ ویا پم گھوٹالے میں خود شیوراج بھی شامل تھے، لیکن ان کا نام ہٹا کر اوما بھارتی کا نام شامل کر دیا گیا ہے۔ ساتھ ہی معاملہ کی تحقیقات کر رہی ایس ٹی ایف پر بھی کانگریس نے سوال اٹھائے ہیں ۔ وہیں شیوراج کا کہنا ہے کہ کانگریس کے الزامات بے بنیاد ہیں۔کانگریس بار بار بھرم پھیلانے کی کوشش کر رہی ہے۔دگ وجے سنگھ نے ایک پریس کانفرنس کے دوران کہا کہ کچھ دن پہلے یہ کہا گیا تھا کہ گورنر کا بیٹا سیریل نمبر 106۔115 تک کی تقرری میں شامل ہے۔ وہیں، دگ وجے سنگھ نے دعویٰ کیا کہ کچھ سیریل نمبر کے سامنے سی ایم لکھا ہوا تھا۔سینئر وکیل کے ٹی ایس تلسی نے کہا کہ ویاپم کے کاغذوں میں وزیراعلیٰ کے دفتر کا نام تبدیل کرکے گورنر ہاؤس لکھ دیا گیا ہے۔ ساتھ ہی وزیراعلیٰ کے نام کی جگہ اوما بھارتی کا نام لکھ دیا گیاہے ۔ساتھ ہی کانگریس کے لیڈر کمل ناتھ نے الزام لگایا کہ اس گھوٹالے میں وزیر اعلیٰ اور انکے خاندان کو بچایا جا رہا ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ محکمہ کے ایک کمپیوٹر کی ہارڈ ڈسک کو بھی تبدیل کر دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لوگوں کے ساتھ ناانصافی ہے اور اس کیلئے وزیراعلیٰ اور انکے وزیر ذمہ دار ہیں۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان کے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ا یس ٹی ایف وزیراعلیٰ کے اشارے پر کام کر رہی ہے۔پریس کانفرنس میں موجود جیوتی رادتیہ سندھیا نے کہا کہ ریاست کے لوگوں کے ساتھ دھوکہ ہوا ہے اور ریاستی حکومت نے کاغذوں کیساتھ چھیڑ چھاڑ کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجرم لوگ آزاد گھوم رہے ہیں اور معصوم طالب علم سلاخوں کے پیچھے ہیں۔وہیں کانگریس لیڈر سریش پچوری نے معاملہ کی تفتیش سی بی آئی سے کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔اس سے پہلے، مدھیہ پردیش میں کاروباری امتحان منڈل کی طرف سے منعقدہ امتحانات میں ہوئے گھوٹالے کی جانچ کیلئے بنائی گئی اسپیشل انویسٹی گیشن ٹیم (ایس آئی ٹی) کو کانگریس کے جنرل سکریٹری دگ وجے سنگھ نے پیر کو اہم دستاویز سونپے ہیں۔ ان دستاویزات میں کیا ہے، سنگھ نے اس بات کا انکشاف نہیں کیا۔قارئین کو بتادیں کہ ویاپم کا پورا نام مدھیہ پردیش کاروباری امتحان منڈل ہے اور یہ سرکاری کالجوں اور ملازمتوں میں بھرتی کیلئے امتحان منعقد کرتا ہے ۔ ادھر بی جے پی نے کہا ہے کہ پوری جانچ عدالت کی زیرنگرانی میں ایس ٹی ایف کررہی ہے ، ایسے میں کسی طرح کی بیان بازی کرنادرست نہیں ہے ۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment