Today: Thursday, November, 15, 2018 Last Update: 03:34 am ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

بالآخر برف پگھل گئی


لائن آف کنٹرول پر تجارت اور بس سروس بحال
سری نگر، 12 فروری (یو ا ین آئی) پاکستان مقبوضہ کشمیر اور وادی کشمیر کی انتظامیہ نے لائن آف کنٹرل کے آرپار تجارت اور بس سروس کو بحال کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے ۔طرفین نے ایک مثبت فیصلہ لیا ہے جس کے تحت آرپار کشمیر روکی گئی گاڑیاں جمعرات کو اپنی منزلوں کی طرف روانہ ہوگئیں۔تاہم جس ٹرک سے بھاری مقدار میں منشیات ضبط کرنے کا دعویٰ کیا گیا ہے ، وہ فی الحال سرحد کے اس پار ہی رکی رہے گی۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ آرپار کشمیر کی انتظامیہ کے درمیان مذاکرات کے کئی دور ہوچکے ہیں اور طرفین نے جمعرات سے تجارت اور بس سروس بحال کرنے پر رضامندی ظاہر کردی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ایک ٹرک کو چھوڑ کر پاکستان مقبوضہ کشمیر کے چکوٹھی اور ٹریڈ سنٹر سلام آباد اوڑی میں رکی تمام دیگر ٹرکوں کو اپنی منزلوں کی طرف روانہ کردیا گیا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان مقبوضہ کشمیر سے آنے والی ٹرک جس سے بھاری مقدار میں منشیات برآمد کی گئی تھیں، کو واپس لوٹنے کی اجازت نہیں دی گئی ہے جبکہ مذکورہ ٹرک کا ڈرائیور بارہمولہ میں ہنوز پولیس کی تحویل میں ہے ۔ آر پار کشمیر کی انتظامیہ نے گذشتہ جمعہ کو ایک میٹنگ کا انعقاد کیا تھا مگر کوئی ٹھوس پیش رفت نہیں ہوسکی تھی۔ بعد میں پاکستان مقبوضہ کشمیر میں پولیس نے چکوٹھی ٹرمنل پر ٹریڈ فسلیٹیشن افسر بشارت اقبال کو حراست میں لے کر اُن سے پوچھ گچھ کی۔ ایک رپورٹ کے مطابق مذکورہ ٹریڈ افسر کو پاکستانی مقبوضہ کشمیر کی ایک عدالت نے 7 روز کے ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے دیا ہے ۔ قابل ذکر ہے کہ 6 فروری کو شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ کے اوڑی میں واقع سلام آباد ٹریڈ سنٹرپر مقبوضہ کشمیر سے آنے والی ایک ٹرک کی تلاشی کے دوران سنتروں کے ڈبوں سے منشیات کے تین سو پیکٹ برآمد کئے گئے تھے جس کے بعد مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے ٹرک ڈرائیور سید عنایت حسین شاہ ساکنہ قمی کوٹ مظفرآباداور بارہمولہ کے ایک مقامی تاجر ظہور احمد ملہ عرف راجیو ترالی کو گرفتار کیا گیا تھا جبکہ دو دیگر مقامی تاجروں سے پوچھ گچھ کی گئی تھی۔ مختلف اشیاء سے لدے 50 ٹرک یہاں سے سرحد پار مقبوضہ کشمیر چلی گئی تھیں جبکہ وہاں سے (مقبوضہ کشمیر سے ) 22 ٹرکیں بشمول سنتروں کے ڈبوں سے لدے ہوئے ٹرک لائن آف کنٹرل پر امن برج پار کرکے سلام آباد ٹریڈ سنٹر تک آپہنچی تھیں۔یہاں سے مقبوضہ کشمیر جبکہ وہاں سے سری نگر آنے والی ٹریکیں چکوٹھی اور سلام آباد میں رکی تھیں جن کو اب اپنی منزلوں کی طرف روانہ کردیا گیا ہے ۔پاکستان مقبوضہ کشمیر کی انتظامیہ اس بات پر اسرار کررہی تھی کہ ملزم ڈرائیو، ٹرک اور منشیات کو اُن کے حوالے کردیا جائے تاکہ وہ خود کاروائی کرسکیں۔ ٹرک سے منشیات برآمد ہونے کے نتیجے میں لائن آف کنٹرول کے آرپار تجارت کے ساتھ ساتھ بس سروس بھی معطل ہوگئی تھی۔آرپار کشمیر تاجروں نے الزام لگایا ہے کہ چھ روز تک ٹرک سروس معطل رہنے کی وجہ سے ٹرکوں میں بھری ہوئی اشیاء خراب ہوگئی ہے ۔ جہاں تجارت 6 فروری کو ہی معطل ہوگئی تھی وہیں پاکستان مقبوضہ کشمیر کی دارالحکومت مظفرآباد اور سری نگر کے درمیان چلنے والی ہفتہ وار کاروان امن بس سروس 9 فروری کو معطل کردی گئی۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment