Today: Sunday, September, 23, 2018 Last Update: 05:29 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

LATEST NEWS   

حرمین شریفین میں حج مشنوں پر پابندی

 

غیرقانونی دفاتر پر روگ لگانے کی کوشش
ریاض: سعودی حکومت نے ہندستان سمیت متعدد ممالک کے کہا ہے کہ وہ آف سیزن میں مکہ اور مدینہ میں اپنے حج مشن کو بند کردیں۔ یہ قدم حرمین شریفین میں غیر قانونی دفاتر کی تیزی سے بڑھتی ہوئی تعداد پر روک لگانے کی کوشش کا حصہ ہے ۔ذرائع کے مطابق ان حج مشنوں کو صرف حج سیزن یعنی شوال سے محرم الحرام کے درمیان ہی کام کرنے کی اجات دی جائے گی۔ہندستانی قونصل خانہ میں قونصلیٹ جنرل بی ایس مبارک کے مطابق انہیں سعودی حکومت کی طرف سے اس سلسلے میں ایک سرکلر موصول ہوا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندستان اس فیصلہ پر عمل کرے گا۔ مسٹر مبارک نے مزید بتایا کہ ہم نے اپنے مکہ مشن سے سائن بورڈ ہٹادیا ہے جبکہ مدینہ منورہ میں ہمارا حج دفتر مدینہ ڈیمولیشن زون میں آتاہے۔ توسیعی منصوبے کے تحت اس علاقے کو منہدم کیا جانا ہے ۔مسٹر مبارک نے کہا کہ ہندستان اپنے حج مشن کی سرگرمیاں سعودی حکومت کی ہدایات کے مطابق صرف چار ماہ تک محدود رکھے گا۔روزنامہ عرب نیوز کے مطابق پاکستانی سفارت خانہ میں ڈپٹی چیف آف مشن خیام اکبر نے بھی بتایا کہ انہیں بھی کل ایک سرکلر موصول ہوا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ سرکلر میں وزارت حج کی طرف سے ہدایت دی گئی ہے کہ حج مشن کے دفاتر صرف مقررہ چار ماہ کے دوران ہی کھولے جائیں۔ایک سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ایسے بہت سے دفاتر حرمین شریفین میں کھل گئے ہیں اور غیر مجاز ایجنٹوں کے ذریعہ پیسے بٹور رہے ہیں جنہوں نے نہ تو سعودی حکومت سے اجازت حاصل کی ہے اور نہ ہی غیرملکی سفارتی مشنوں سے وابستہ ہیں۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ حکومت کا تازہ قدم ایسے ہی دفاتر پر قدغن لگانا ہے ۔ہندستان اور پاکستان کے علاوہ متعدد دیگر ممالک ہیں جن کے شہریوں نے مکہ مکرمہ ، مدینہ منورہ اور جدہ میں درجنوں حج آفس کھول رکھے ہیں۔ ان میں سے بیشتر دفاتر میں سفارت کاروں اور غیر ملکی مہمانوں کے لئے قیام کی سہولیات بھی دستیاب ہیں۔

 

 

...


Advertisment

Advertisment