Today: Wednesday, September, 19, 2018 Last Update: 10:56 pm ET

  • Contact US
  • Contact For Advertisment
  • Tarrif
  • Back Issue

BUSINESS NEWS   

ڈیزل کی قیمتیں سرکاری کنٹرول سے آزاد

 

وزیراعظم کی صدارت میں مرکزی کابینہ کا فیصلہ ، دہلی میں آج سے سستا ہوگا 3.37روپے فی لیٹر ڈیزل

نئی دہلی ،18اکتوبر ( ایس ٹی بیورو) حکومت نے ڈیزل کی قیمتوں کو ہفتہ کو کنٹرول سے آزاد کر دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ملک میں ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کر دی گئی ہے اور دہلی میں آج آدھی رات سے ڈیزل کے دام 3.37 روپے کم ہو جائیں گے۔وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں آج یہاں ہوئی مرکزی کابینہ کی میٹنگ میں ڈیزل کی قیمتوں کو سرکاری کنٹرول سے آزاد کرنے کا فیصلہ لیا گیا۔ وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے کابینہ کے فیصلے کی جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ اب ڈیزل کی قیمتیں مارکیٹ کی بنیاد ہوں گی۔تیل مارکیٹنگ کمپنی انڈین آئل نے فورا ڈیزل کی قیمتوں میں کمی کرنے کا اعلان کیا۔ اس سے دہلی میں اس کی قیمتوں میں 3.37 روپے فی لیٹر کی کمی آ جائے گی۔پیشرو حکومت نے گزشتہ سال 17 جنوری کو ڈیزل پر برتری سبسڈی کو کم کرنے کے مقصد سے اس کی قیمتوں میں فی ماہ 50 پیسے فی لیٹر اضافہ کرنے کی چھوٹ تیل مارکیٹنگ کمپنیوں کی دی تھی۔ حال میں بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں بھاری کمی آنے سے گھریلو سطح پر تیل کی مارکیٹنگ کمپنیوں کو ابھی فی لیٹر 3.56 روپے کا منافع ہو رہا تھا۔حکومت نے جب تیل مارکیٹنگ کمپنیوں کو ڈیزل کی قیمتوں میں 50 پیسے فی لیٹر ماہانہ اضافہ کرنے کا حق دیا تھا، اس وقت ڈیزل کی قیمت دہلی میں 47.65 روپے فی لیٹر تھی۔ اس کے بعد 25 بار اس کی قیمتوں میں اضافہ کیا گیا اور یہ بڑھ کر.97 58 روپے فی لیٹر پر پہنچ گیا۔ پٹرول کی قیمتوں کو جون 2010 میں ہی سرکاری کنٹرول سے آزاد کردیا گیا تھا ۔

...


Advertisment

Advertisment